مقبول خبریں
برطانوی حکومت مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے اپنا اثر و رسوخ استعمال کرے:ایم پی جیوڈتھ کمنز
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
چین، بھارت سرحدی کشیدگی عروج پر پہنچ گئی، لداخ میں افواج کے درمیان جھڑپیں
لاہور:سکم سرحد کے بعد لداخ میں بھی چین اور بھارت کے درمیان سرحدی کشیدگی بڑھنے لگی، لداخ میں دونوں افواج کے درمیان جھڑپیں ہوئیں ہیں۔ اہلکاروں نے ایک دوسرے پر سنگ باری کی تاہم کوئی آتشیں ہتھیار استعمال نہیں ہوا، دو گھنٹے کی کشیدگی کے بعد دونوں طرف کے فوجی اہلکار اپنی اپنی جگہوں پر واپس چلے گئے۔پریس ٹرسٹ آف انڈیا کے مطابق چینی فوجیوں نے پنگونگ جھیل کے نزدیک انڈین علاقے میں داخل ہونے کی کوشش کی جس کے بعد فوجیوں نے دونوں جانب سے ایک دوسرے پر پتھر پھینکے جس سے دونوں اطراف کے فوجی معمولی زخمی ہوئے۔ دوسری جانب چینی حکام کا کہنا ہے کہ اس کے فوجی اپنی سرحدی حدود کے اندر تھے۔ چینی وزارت خارجہ نے بھارت پر زور دیا ہے کہ وہ سرحد پر امن و استحکام کو یقینی بنائے۔ یاد رہے کہ انڈیا، چین اور بھوٹان کے سرحدی علاقے ڈوکلام کی وجہ سے انڈیا اور چین کے درمیان صورتحال کشیدہ ہے۔