مقبول خبریں
اوورسیز پاکستانیز فائونڈیشن کو فعال کردار ادا کرنے کیلئے عملی اقدامات اٹھا ئے ہیں:بیرسٹر امجد
بے نظیر بھٹو کو جمہوریت کے دشمنوں نے قتل کیا، برطانوی وزیر اعظم
تارک وطن بزرگوں نے محنت کا جو بیج بویا تھا آج اسکے ثمرات آنا شروع ہوگئے ہیں
خوشحالی شریفوں اور زرداریوں کیلئے نہیں غریبوں کیلئے ہونی چاہئے: عمران خان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فورسز کی فائرنگ، مزید 2 نوجوان شہید
کونسلر وحید اکبر کا آزاد کشمیر کے جسٹس شیراز کیانی کے ا عزاز میں عشائیے کا اہتمام
برطانیہ کے ساحلی شہر سائوتھ ہیمپٹن میں ملی نغموں کی گونج، ڈپٹی میئر کی خصوصی شرکت
برما میں مسلمانوں کا قتل عام انسانی حقوق کی کھلم کھلا خلاف ورزی ہے:وہیپ اینڈریو
کرپٹ خان
پکچرگیلری
Advertisement
پاک سر زمین پارٹی کے زیر اہتمام پاکستان کے 70ویں یوم آزادی کے موقع پر رنگا رنگ تقریب
اولڈہم:برصغیر پاک و ہند کی تقسیم کے وقت بہت سے لوگوں نے دو قومی نظریے کی مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ مذہب کے نام پر ایک الگ ریاست کا قیام نہیں ہونا چاہئے بلکہ متحدہ ہندوستان میں بہتری ہے لیکن علامہ اقبالؒ کا خواب اور ہمارے محسن بانی پاکستان کی دور اندیشی اور وسعت نظری کی بدولت کہ مسلمانوں کیلئے علیحدہ ملک کا قیام نا گزیر درست فیصلہ تھا آج اگر مودی کے ہندوستان میں بسنے والے مسلمانوں کی حالت زار دیکھی جائے اور ان سے پوچھا جائے تو انکی سوچ یہی ہو گی کہ پاکستان کے ساتھ رہنے میں انہیں مکمل مذہبی آزادی ہونے کے ساتھ برابری کی سطح پر حقوق لیں گے،قائد اعظمؒ کی بات70سال بعد درست ثابت ہوئی کسی قوم کے عظیم لیڈر ایسے ہوتے ہیں افسوس کا مقام ہے کہ آج ہمارے حکمرانوں اور فوجی آمریت کی وجہ سے پاکستان جس جگہ کھڑا ہے سب کے لئے لمحہ فکریہ ہے سیاستدانوں نے ملک اور قوم کی تقدیر بدلنے کی بجائے ذاتیات کی تقدیر بدلنے کو ترجیح دی اور وسائل کا استعمال کر کے لوٹ مار کی،یہ باتیں پاک سر زمین پارٹی کے سیکرٹری جنرل رضا ہارون نے ایسٹرن پویلین ہال اولڈہم میں پارٹی کے برطانیہ و یورپ کے صدر چوہدری الطاف شاہد سدھو کی جانب سے پاکستان کے 70ویں یوم آزادی کے موقع پر منعقدہ ایک رنگا رنگ تقریب کے دوران کیا،انہوں نے مزید کہا کہ سیاسی شعور،تحمل و برداشت کا حال یہ ہے کہ سپریم کورٹ نے پانامہ کیس میں سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف کو بار بار مواقع فراہم کرنے کے باوجود ثبوت کی عدم دستیابی کے بعد نا اہل قرار دیا تو نا اہل مشیران اور قریبی رفقا کے غلط مشوروں کی بدولت سڑکوں پر آ گئے جو اخلاقی،قانونی طور پر ملک کے تین مرتبہ وزیر اعظم رہنے والے کو زیب نہیں دیتا،اگر جے آئی ٹی بننے سے پہلے استعفیٰ دے دیتے تو کسی صورت نہ اہل نہ ہوتے،انہوں نے کہا کہ جب کوئی آمر اقتدار سنبھالتا ہے تو اسے جمہوریت پسند اور مشہور ہونے کا شوق ہوتا ہے اور جب کوئی جمہوری طریقے سے اقتدار سنبھالتا ہے تو وہ آمر بن جاتا ہے،پاکستان کے آئین آرٹیکل7میں واضع طور پر درج ہے کہ ریاست کی بھاگ دوڑ حکومت ہے نہ کہ فوج اور عدلیہ،حکومت مسلم لیگ کی تو واویلا سمجھ سے بالا تر ہے،انہوں نے کہا کہ فاروق ستار شریف النفس انسان ہیں انہیں غدار وطن الطاف حسین کو آکسیجن مہیا کرنے کا کام نہیں کرنا چاہئے،انہوں نے کہا ستر سال گزرنے کے باوجود ہم عوام کو بنیادی سہولیات، پینے کا صاف پانی،صحت و تعلیم نہیں دے سکے جس سے قومیں بنتی ہیں،انصاف،اختیار اور اہلیت کا نظام جب تک آزادانہ طریقے سے معرض وجود نہیں آئے گا آگے بڑھنا مشکل ہے،آئیے آج کے دن تجدید عہد کرتے ہوئے اس عزم کا اعادہ کریں کہ ملکی ترقی اور نظام بدلنے کیلئے اپنا بھرپور کردار ادا کریں گے،پاکستان زندہ باد،چوہدری الطاف شاہد نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاک سر زمین پارٹی برطانیہ و یورپ اپنے قائدین مصطفیٰ کمال،انیس قائم خانی،احمد رضا،رضا ہارون کی قیادت میں بانی پاکستان قائد اعظمؒ کی سوچ و فکر کے مطابق پاکستان کی ترقی و خوشحالی کے لئے بھرپور کردار ادا کرے گی،تقریب کی نظامت صدر ویمن ونگ نارتھ ویسٹ حمیرہ حقانی نے سر انجام دیئے،تلاوت کلام پاک کا شرف قاری عباس کو نصیب ہوا،نعت رسول مقبولؐ کی سعادت و ملی نغمات محمد سرور نے پیش کئے،اولڈہم کونسل کے میئر کونسلر شاداب قمر نے بحیثیت مہمان خصوصی خوش آمدید کرتے ہوئے کہا کہ کیونکہ پاکستان مادر وطن ہے ہمیں اپنی نوجوان نسل کو اس سے ناطہ جوڑے رکھنے کیلئے اس تقریبات میں ساتھ لانا چاہئے جیسا کہ آج بہت سارے بچوں کو دیکھ کر خوشی ہو رہی ہے اور انہیں پاکستان بھی لے کر جانا چاہئے،اس پروقار تقریب میں بچوں نے بھی ملی نغمات پر عمدہ پرفامنس دیکر حاضرین اور مہمانان گرامی کے دلوں میں گھر کر لیا،پاک سر زمین پارٹی برطانیہ کے سینئر نائب صدر ڈاکٹر سرور خان،نائب صدر محمد یونس خواجہ،میڈیا کو آرڈینیٹر مرزا فیصل محمود،جوائنٹ سیکرٹری عمران خان،برمنگھم کی صدر عظمیٰ حقانی،مڈ لینڈ وویمن ونگ کی صدر زبیدہ شاہد،بریڈ فورڈ کے صدر کا شان جیلانی نے بھی اظہار خیال کیا،نزیرہ سلیم اور شہزادہ سلیم نے پروگرام کے تمام انتظامات میں بھرپور معاونت کی جبکہ خواجہ کلیم الرحمن اور مظہر بخاری نے بھی اظہار خیال کیا۔خصوصی رپورٹ:فیاض بشیر