مقبول خبریں
مسلم کانفرنس کے مرکزی راہنما راجہ یاسین کے اعزاز میں چوہدری محمد بشیر رٹوی اور ساتھیوں کا استقبالیہ
بیسٹ وے گروپ کے سربراہ سرانور پرویز کی جانب سے کمیونٹی رہنمائوں کے اعزاز میں استقبالیہ
نبوت بھی اﷲ کی عطا ہے اور صحابیت بھی، نبوت بھی ختم ہے اور صحابیت بھی: ڈاکٹر خالد محمود
شریف فیملی کو فوری ریلیف نہ مل سکا، جولائی کے آخر تک سماعت ملتوی
مقبوضہ کشمیر :بھارتی فوج نے نوجوان کا سر تن سے جدا کر دیا ،احتجاج،جھڑپیں
شیر خدا نے نبی پاک کی آواز پر لبیک کہہ کر اسلام سے محبت اور وفا کی عمدہ مثال قائم کی
پیپلزپارٹی ہی آئندہ انتخابات میں چاروں صوبوں میں اکثریت حاصل کریگی:میاں سلیم
مسئلہ کشمیر پرقوم کا نکتہ نظر اور قربانیاں رنگ لا رہی ہیں:جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت
نیا موسم تمہارا منتظر ہے۔۔۔۔۔۔۔۔
پکچرگیلری
Advertisement
مسئلہ کشمیر کے حل کے بغیر خطہ میں امن قائم نہیں ہو سکتا: افضل خان، ربیکا لانگ بیلی
مانچسٹر:مسئلہ کشمیر تقسیم پاک و ہند کے وقت برطانیہ کی طرف سے ایک چھوڑا گیا ادھورا ایجنڈا ہے،لہٰذا برطانوی حکومت و سیاستدانوں کی دوہری ذمہ داری ہے کہ وہ اس بنیادی مسئلہ کو حل کروانے میں اپنا کردار ادا کریں،برطانوی پارلیمنٹ کے اندر مختلف سیاسی جماعتوں کی حمایت حاصل کرنے کیلئے اس بارے بھرپور کوشش جاری رہے گی،برطانوی سیاستدانوں کے ساتھ ساتھ میڈیا کو بھی بھارت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر میں کھلے عام مظلوم اور نہتے لوگوں پر ڈھائے جانے والے وحشیانہ مظالم بارے آگاہی دینا انتہائی ضروری ہے تاکہ عالم اقوام تک کشمیری قوم کی آواز پہنچ سکے،ان خیالات کا اظہار برطانوی پارلیمنٹ کے ممبران افضل خان اور ربیکا لانگ بیلی نے مسلم کانفرنس برطانیہ کے صدر چوہدری بشیر احمد رٹوی کی جانب سے مقامی ہال میں رکھی گئی کشمیر کانفرنس کے موقع پر کیا،انہوں نے مزید کہا کہ اس مسئلہ کے پائیدار حل کے بغیر خطہ میں امن قائم نہیں ہو سکتا،پاکستان،بھارت ایٹمی طاقتیں ہیں ذرا سی کوتاہی کسی بڑے سانحہ کا پیش خیمہ ثابت ہو سکتی ہے لہٰذا اقوام متحدہ کی اولین ذمہ داری ہے اور برطانیہ کا اخلاقی حق بنتا ہے کہ وہ اس بارے اپنا کردار ادا کرتے ہوئے کشمیریوں کو حق خود ارادیت دلوائیں،کل جماعتی حریت کانفرنس کے کنوینئر یوسف نسیم نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر کے زمینی حقائق کو اگر مد نظر رکھا جائے تو اصولی اور اخلاقی طور پر بھارت بوکھلاہٹ کا شکار ہے اور جنگ ہار چکا ہے،شبیر مغل ایڈووکیٹ نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں تحریک آزادی کشمیر کا علم بلند کرنے والے دہشت گرد نہیں بلکہ آزادی کیلئے جدو جہد کر رہے ہیں،چوہدری بشیر احمد رٹوی نے کہا کہ بھارتی جارحیت اور مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی تاریخی پامالی بارے دنیا بھر میں آگاہی دینے کیلئے ایسی کانفرنسز کا انعقاد تواتر کے ساتھ ہونا چاہئے،کونسلر تفہیم نے بھی خیالات کا اظہار کیا،سید باسط شاہ مشوانی نے کہا بین الاقوامی سطح پر مسئلہ کشمیر میں مزید موثر طور پر اٹھانے کیلئے عالمی میڈیا کی توجہ دلوانا نا گزیر ہے،شرکاء تقریب نے کشمیریوں کے اصولی موقف حق خود ارادیت کی بھرپور حمایت کی،مختلف سیاسی جماعتوں کے راہنمائوں نے بھی شرکت کی۔خصوصی رپورٹ:فیاض بشیر