مقبول خبریں
راچڈیل کیسلمئیرسنٹر میں کمیونٹی کو صحت مند رہنے،حفاظتی تدابیر بارے آگاہی ورکشاپ کا انعقاد
یورپی پارلیمنٹ میں قائم ’’فرینڈز آف کشمیر گروپ‘‘ کی تنظیم سازی کردی گئی
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت جولائی میں برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز،سیمینارز منعقد کریگی
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
مظلوم کشمیری بھائیوں کیلئے پہلے کی طرح آواز بلند کرتے رہیں گے:مئیر کونسلر طاہر محمود ملک
اوورسیز پاکستانیز ویلفیئر کونسل کا وسیم اختر چوہدری اور ملک ندیم عباس کے اعزاز میں استقبالیہ
مسئلہ کشمیر کو برطانیہ و یورپ میں اجاگر کرنے پر تحریکی عہدیداروں کا اہم کردار ہے: امجد بشیر
ہم نے سچ کو دیکھا ہے جھوٹ کے جھروکوں سے!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
آزاد اقوام میں شمولیت کیلئے ضروری ہے کہ ہم اپنی جدوجہد میں تیزی لائیں: لارڈ مئیر کونسلر خادم حسین
بریڈفورڈ ... بریڈفورڈقونصلیٹ کے وسیع کانفرنس ہال میں کشمیر کے یوم سیاہ کے حوالے سے پروقار تقریب ہوئی۔ پاکستان کے قونصل خلیل احمد باجوہ نے موقع کی مناسبت سے جاری کئے گئے پیغامات پڑھ کر سنائے اور کشمیریوں کی جدوجہد آزادی کی تحریک میں ان کا ہر ممکن ساتھ دینے کے وعدہ کا اعادہ کیا۔ تقریب کے مہمان خصوصی بریڈ فورڈ کے لارڈ مئیر کونسلر خادم حسین تھے، جنہوں نے اس امید کا اظہار کیا کہ ان کی زندگی میں وہ دن بھی آئے گا جب کشمیریوں کا شماربھی آزاد اقوام میں ہوگا۔تاہم اس کیلئے ضروری ہے کہ ہم کشمیر کی مکمل آزادی اور خود مختاری کیلئے اپنی جدوجہد میں تیزی لائیں۔ انہوںنے کہاکہ پاکستان بھارت تنازع نے ڈیڑھ کروڑ انسانوں کا پیدائشی حق ان سے چھین رکھاہے ۔اجتماع سے ان کے علاوہ تحریک حق خود ارادیت کے چئیر مین راجہ نجابت حسین ، وزیراعظم آزاد کشمیر کے مشیر سردار عبدالرحمن خان ، پاکسیان مسلم لیگ ن کے اسد سجاد بٹ، پاکستان پیپلز پارٹی یو کے کے چوہدری غالب رضا، تحریک انصاف کے آصف خان ، اے ڈی خان، پاکستان ٹیلی ویژن کی ثمینہ وقار اور شہناز خان نے خطاب کیا جبکہ غزل انصاری ،تبسم حسن اور ممتاز اعوان تاجیدی نے اپنا کلام سنایا ۔ حاجی چوہدری کرامت حسین نے علامہ اقبال کے اشعار پڑھے اور محمد ناصر کریم نے نعت رسول ﷺ پیش کی ۔سردار عبدالرحمن خان نے یوم سیاہ کے پس منظر پر روشنی ڈالتے ہوئے ان حالات و محرکات کی نشاندہی کی جن کے باعث 27اکتوبر 1947کو بھارت نے مقبوضہ کشمیر میں اپنی افواج داخل کیں۔ تحریک انصاف کے رہنما آصف خان نے بڑی جذباتی تقریر کرتے ہوئے کہاکہ آج ہمیں اپنی کوتاہیوں کا بھی اقرار کرلینا چاہئے۔انہوں نے کہاکہ تحریک انصاف تو نئی جماعت ہے لیکن باقی دو بڑی جماعتیں بتائیں کہ تین تین مرتبہ ملک کا اقتدار سنبھالنے کے باوجود انہو ں نے اپنے دور مین کشمیریوں کیلئے کیا کیا؟ راجہ نجابت حسین نے کہاکہ انہوں نے تو اپنی مادر وطن کی آزادی کی جدوجہد کو کل وقتی اختیار کر رکھا ہے لیکن میری آپ سے گزارش ہے کہ کم از کم خطوط اور ای میل کے ذریعہ ہی اپنے اراکین پارلیمنٹ اور ٹریڈ یونینوں کو اس بارے میں باخبر کرتے ہوئے ان سے مدد طلب کرتے رہیں۔غالب رضا ایڈووکیٹ نے کشمیر کی آزادی میں سرگرم کردار ادا کرنے پر سردار ابراہیم خان کے ساتھ ساتھ چوہدری نورحسین کو بھی خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہاکہ ان کی جماعت پیپلز پارٹی کی بنیا د ہی مسئلہ کشمیراور کشمیریوں کے حق خوداردیت کی جدوجہد پر رکھی گئی تھی ۔تقریب کی نظامت قونصلیٹ کے اتاشی حافظ محمد عمر نے کی۔