مقبول خبریں
آشٹن گروپ کی جانب سے پوٹھواری شعر و شاعری کی محفل،شعرا نے خوب داد وصول کی
مشتاق لاشاری سی بی ای کا پورٹریٹ کونسل ہال میں لگا نے کی تقریب، بیگم صنم بھٹو نے نقاب کشائی کی
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
عوام کے مینڈیٹ کو ایک منٹ میں ختم کر دیا،یہ عوام کے ووٹوں کی توہین ہے:نواز شریف
راولپنڈی: آج پورا شہر سڑکوں پر امڈ آیا ہے، پورے پاکستان میں ایسی محبت کبھی نہیں دیکھی، نواز شریف کا کمیٹی چوک میں خطاب، کہتے ہیں آج پاکستان کی عوام نے اپنا فیصلہ دے دیا۔کیا فیصلہ آپ کے ووٹوں کی توہین ہے یا نہیں؟ نواز شریف کا عوام سے سوال، کہتے ہیں پورے پاکستان میں ایسی محبت کبھی نہیں دیکھی، یہ انقلاب کا پیش خیمہ ہے، راولپنڈی میرا شہر ہے، نواز شریف کے خلاف فیصلے کو عوام نے قبول نہیں کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ عوام کی عدالت فیصلہ دے رہی ہے، نواز شریف کو کس بات کی سزا دی گئی؟ عوام کے مینڈیٹ کو ایک منٹ میں ختم کر دیا گیا، یہ عوام کے ووٹوں کی توہین ہے یا نہیں؟ تنخواہ نہ لینے پر مجھے نااہل کیا گیا، کیا کوئی کک بیک یا کمیشن لیا؟نواز شریف کا کہنا تھا کہ راولپنڈی کا فیصلہ پورے ملک کا فیصلہ ہوتا ہے، کسی وزیر اعظم نے مدت پوری نہیں کی، اوسطاً ڈیڑھ سال ایک وزیر اعظم کو اقتدار ملا، یہ مذاق پاکستان کے ساتھ 70 سال سے ہو رہا ہے، ہم نے اتنی محنت کر کے پاکستان کو آگے بڑھایا لیکن اب پاکستان پھر پستی کی طرف جا رہا ہے۔ سابق وزیر اعظم نے کہا کہ وہ کہتے ہیں تنخواہ نواز شریف نے کیوں نہیں لی؟ میں کہتا ہوں جب تنخواہ لی ہی نہیں تو ظاہر کیوں کروں؟ آپ کے ووٹ کی توہین مجھے اور آپ کو قبول نہیں، آپ نے میرا ساتھ دینا ہے، ہمارے آنے سے پہلے ملک میں اندھیرے تھے، آج لوڈ شیڈنگ عملاً ختم ہو رہی ہے۔نواز شریف نے کہا کہ اگلے سال کے شروع میں ملک میں لوڈ شیڈنگ کا نام و نشان نہیں رہے گا، گلگت بلتستان اور آزاد کشمیر خوشحال ہو رہے ہیں،2014ء میں دھرنا آ گیا، وہ مولوی صاحب آج پھر پاکستان پہنچ گئے ہیں، یہ کینیڈا میں عیش و عشرت کی زندگی گزارتے ہیں اور پاکستان میں تباہی کا نسخہ لے کر آ جاتے ہیں، دھرنے والوں اور مولوی نے ملک کو نقصان پہنچایا، پاکستان سے غربت اور جہالت کو ختم ہونا چاہئے۔ نواز شریف نے کہا کہ میرے زمانے میں پشاور سے اسلام آباد اور پھر لاہور موٹروے بنی، جب میری حکومت ختم کی گئی تو لاہور سے آگے موٹروے نہیں بڑھی، میری دوبارہ حکومت آئی تو موٹروے کراچی جا رہی ہے۔سابق وزیر اعظم نے کہا کہ موٹروے کا بیشتر حصہ 2018ء اور 19ء میں مکمل ہو جائے گا، بلوچستان میں سڑکوں کا جال بچھایا ہے، منصوبہ بندی سے دہشتگردی کو ختم کیا، آج ایک میجر اور 3 جوانوں نے جام شہادت نوش کیا، فوجی جوانوں کی شہادت کو خراج عقیدت پیش کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ آج ہم پاکستان کے بہترین مفاد میں کام کر رہے ہیں، پاکستان کو بدلنا ہو گا، مینڈیٹ کا احترام نہیں ہو گا ترقی نہیں ہو گی، میرے بھائیوں وعدہ کرو اپنے مینڈیٹ کا احترام کرواؤ گے، کسی کو اس مینڈیٹ پر شب خون مارنے کی اجازت نہیں دو گے اور اپنے ووٹ کے تقدس کا خیال رکھو گے، وعدہ کرو کہ اپنے وزیر اعظم کی تذلیل اور بےعزتی نہیں ہونے دو گے۔سابق وزیر اعظم نے کہا کہ اللہ کے فضل سے میرے ہاتھ صاف ہیں، ان ججوں نے کہا کہ نواز شریف کے خلاف کرپشن کا کوئی کیس نہیں، کیس تو دور کی بات، کوئی داغ اور الزام بھی نہیں، اس فیصلے کا فیصلہ آپ پر اور تاریخ پر چھوڑتا ہوں، اس ملک کے اندر قانون کی حکمرانی کے بغیر عزت کی زندگی نہیں مل سکتی، اس ملک کو ان تمام مسائل سے نجات دلانے کے لئے ایک نقشہ پیش کرونگا، میں ہر گز آپ سے یہ توقع نہیں کرتا کہ آپ مجھے بحال کرائیں، اس ملک کی ترقی اور بہتر مستقبل کے لئے نواز شریف کا ساتھ دیں، کیا آپ ملک کی تقدیر بدلنے کے لئے نواز شریف کا ساتھ دینگے؟ میں آپ سے وعدہ کرتا ہوں کہ اقتدار کی لالچ کے بغیر غریبوں کی قسمت بدلیں گے۔ انہوں نے صحافیوں پر حملوں کی مذمت بھی کی۔