مقبول خبریں
آشٹن گروپ کی جانب سے پوٹھواری شعر و شاعری کی محفل،شعرا نے خوب داد وصول کی
مشتاق لاشاری سی بی ای کا پورٹریٹ کونسل ہال میں لگا نے کی تقریب، بیگم صنم بھٹو نے نقاب کشائی کی
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
جموں کشمیر نیشنل انڈی پینڈس الائنس کے زیر اہتمام کانفرنس کا انعقاد
برنلے:جموں کشمیر نیشنل انڈی پینڈس الائنس کے زیر اہتمام ایک کانفرنس بعنوان ’’ آزاد کشمیر کتنا آزاد ہے ‘‘ منعقد کی گئی جس میں ریاست جموں و کشمیر سے تعلق رکھنے والی مختلف آزادی پسند تنظیموں کے نمائندوں نے شرکت کی،کانفرنس کے اغراض و مقاصد بیان کرتے ہوئے الائنس کے چیئرمین محمود کشمیری نے کہا کہ یکم جولائی کو بریڈ فورڈ میں صدر آزاد کشمیر سے حکومت آزاد کشمیر کے اختیارات کے بارے میں بات کرنا چاہتے تھے لیکن انہوں نے بات سننے سے انکار کر دیا جس کی وجہ سے الائنس نے اس کانفرنس کے انعقاد کا فیصلہ کیا تاکہ ریاست جموں کشمیر کے عوام کو یہ باور کرایا جا سکے کہ جس خطہ کو وہ آزاد سمجھتے ہیں اس میں عوام اور انکے حکمرانوں کو کتنی آزادی حاصل ہے انہوں نے کہا کہ ایکٹ 1974کے نافذ ہونے کے بعد مظفر آباد حکومت کو اپنے وسائل پر کوئی اختیار نہیں جبکہ گلگت بلتستان جو تاریخی آئینی اور قانونی اعتبار سے ریاست کا حصہ ہیں گزشتہ ستر برس قبل آزاد کشمیر سے کوئی رابطہ سڑک نہیں بنائی گئی ۔