مقبول خبریں
یوم عاشور کے حوالہ سے نگینہ جامع مسجد اولڈہم میں روح پرور،ایمان افروز محفل کا اہتمام
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
میاں جی کی لڑکیاں
پکچرگیلری
Advertisement
مقبوضہ کشمیر کے سابق وزیر اعلیٰ کا پاک بھارت مذاکرات کی بحالی کا مطالبہ
سرینگر: سابق وزیر اعلیٰ مقبوضہ کشمیر فاروق عبد اللہ نے پاک بھارت مذاکرات کی بحالی سمیت مسئلہ کشمیر پر تیسرے فریق کی ثالثی کا مطالبہ کر دیا ہے۔ میڈیا سے گفتگو میں فاروق عبداللہ کا کہنا تھا کہ تعلقات بحالی کی ذمہ داری نریندر مودی کے بجائے منموہن سنگھ اور ملائم سنگھ جیسی شخصیات کو سونپی جائے۔ادھر فاروق عبد اللہ کے بیان پر بھارت میں شدید رد عمل سامنے آیا ہے۔ بی جے پی کے ترجمان نرسیما راؤ نے کہا کہ فاروق عبداللہ حریت پسندوں اور پاکستان کی زبان بول رہے ہیں۔ انہوں نے کشمیر پر ثالثی کو پاکستان کے سامنے گھٹنے ٹیکنے کے مترادف قرار دیا جبکہ کانگریس نے بھی کشمیر پر کسی تیسری قوت کی ثالثی کو مسترد کر دیا۔