مقبول خبریں
یوم عاشور کے حوالہ سے نگینہ جامع مسجد اولڈہم میں روح پرور،ایمان افروز محفل کا اہتمام
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
میاں جی کی لڑکیاں
پکچرگیلری
Advertisement
میاں نواز شریف پاکستانی عوام کے وزیر اعظم کہلوانے کا جواز کھو چکے:پی ٹی آئی برطانیہ
بری:پانامہ لیکس میں دنیا بھر کے افراد کی آف شور کمپنیوں کے نام آنے کے بعد اعلیٰ عہدوں پر فائز شخصیات نے اپنی بے گناہی ثابت کرنے کیلئے ثبوت مہیا کئے یا پھر اپنے منصب سے استعفیٰ دے دیا،پاکستان کے وزیر اعظم میاں نواز شریف کو چاہئے تو یہ تھا کہ نام آنے کے بعد فی الفور عہدہ چھوڑ کر قانون کو تمام شواہد دے کر سروخرو ہوتے، لیکن ہٹ دھرمی کو اپنا وطیرہ بنا کر بادشاہ بننے کو ترجیح دی،ہمارے قائد تحریک انصاف کے چیئرمین سچے محب الوطن اور ہار نہ ماننے والے عمران خان نے شریف خاندان کی لوٹ مار کو بے نقاب کرنے کا ارادہ کر لیا اور انہیں ملک کی عدالت عظمیٰ کے کٹہرے میں لا کھڑا کیا،طویل بحث و مباحث کے بعد پانچ ججوں کے پینل میں سے دو نے تو وزیر اعظم کو صادق و امین قرار نہ دیا جبکہ تین نے اس کرپشن بارے مزید تفتیش کیلئے جوائنٹ انوسٹی گیشن تشکیل دی تو اس وقت حکمران اور درباریوں نے مٹھائیاں تقسیم کیں،جوائنٹ انوسٹی گیشن ٹیم نے جوں جوں گہرائی میں جا کر تحقیقات کا دائرہ کار وسیع کیا اورہر طرح کے حربے استعمال کرنے کے باوجود ٹیم نے غیر جانبدارانہ اور قانون کے عین مطابق60دن کے بعد رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع کروا دی اور وزیر اعظم میاں نواز شریف اور خاندان بھر کو معلوم ہو گیا کہ اب چونکہ وہ منی لانڈرنگ کو ثابت نہیں کر سکے ہیں،نا اہلی کا فیصلہ خلاف آئے گا،جے آئی ٹی رپورٹ کو متنازعہ بنا دیا گیا ہے لیکن اب پاکستان کی عوام اور عدالت عظمیٰ قانون کے مطابق فیصلہ کر کے عمران خان کی سوچ و فکر نیا پاکستان کو عملی جامہ پہنانے کی قدم کی جانب اہم پیش رفت ہو گی،ان خیالات کا اظہار تحریک انصاف برطانیہ کے جنرل سیکرٹری سید باسط شاہ مشوانی،نارتھ ویسٹ کے قائم مقام صدر عمران چوہدری،سیکرٹری جنرل نوید بھٹی اور سیکرٹری اطلاعات شہناز صدیق نے مشترکہ طور پر مقامی ریسٹورنٹ میں ایک پریس کانفرنس کے موقع پر کیا،انہوں نے مزید کہا اب میاں نواز شریف پاکستان کی عوام کے وزیر اعظم کہلوانے کا قانونی اور اخلاقی جواز کھو چکے ہیں انہیں بلا تاخیر مستعفیٰ ہو جانا چاہئے جوں جوں وقت گزرتا جائے گا مزید دلدل میں پھنستے چلے جائیں گے،انہوں نے مزید کہا کہ دنیا بھر میں ہم جگ ہنسائی کا باعث بن رہے ہیں انکا مزید عہدے پر رہنا قوم کی توہین ہے،انہوں نے کہا کہ نارتھ ویسٹ اور برطانیہ کے عہدیداروں و کارکنان مرکزی قیادت کی ہدایات کے مطابق کام کرنے کے لئے تیار ہے اور اگر احتجاجی مظاہروں بارے مرکزی قیادت نے ہدایات جاری کیں تو برطانیہ بھر میں وزیر اعظم میاں نواز شریف کے خلاف بھرپور طریقے سے یہ سلسلہ شروع کیا جائے گا اب مادر وطن میں لوٹ مار کا نظام نہیں چلے گا سب کا محاسبہ ہو گا اور پاکستان اور عوام خوشحالی کی جانب گامزن ہو گی جہاں پر عدل و انصاف،اہلیت و قابلیت اور مساوی مواقع فراہم ہوں گے اور قائد اعظم کی سوچ و افکار کو عملی جامہ پہنایا جائے گا ہم مرکزی قیادت کے ساتھ مکمل اظہار یکجہتی کرتے ہوئے انکے فیصلے پر لبیک کیلئے ہمہ وقت تیار ہیں۔خصوصی رپورٹ:فیاض بشیر