مقبول خبریں
ن لیگ برطانیہ و یورپ کا نواز شریف،مریم نواز اور کیپٹن صفدر کی سزائیں معطل ہونے پر اظہار تشکر
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
ہم دھوپ میں بادل کی، درختوں کی طرح ہیں!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
ایک ماں کی سچی کہانی پر پابندی وحشیانہ حقائق کو چھپانے کی کوشش ہے : خواجہ کبیر احمد
ناٹنگھم ...کشمیری قوم پرست رہنماخواجہ کبیر احمد نے کہا ہے کہ مشہور کشمیری محقق و مصنف سعید اسد کشمیری قوم کا سرمایہ ہیں جنہوں نے کشمیر ی قوم پر ماضی میں ہونے والے مظالم سے پردہ چاک کیا اور موجودہ نسل کو کشمیر کی تاریخ سے روشناس کروایا۔انکی تصنیف دیوانوں پر کیا گزری بھی ایک تاریخی حقیقت ہے اسی طرح کرشنا مہتا ( انیس سو سنتالیس کے غیر ملکی حملے تک مظفر آباد کے وزیر وزارت ڈپٹی کمشنر دونی چند مہتا کی بیوی) کی کتاب کا اردو ترجمہ ایک ماں کی سچی کہانی ایک حقیقت ہے جس کے ذریعے موجودہ نسل کو یہ علم ہوا کہ انیس سو سنتالیس میں غیر ملکی حملہ آوروں نے کشمیری قوم پر کیا کیا ستم ڈھائے یہ چھوٹی سی کتاب کشمیر کی آنیوالی نسلوں کے لیے بھی ایک سبق ہے جس پر پابندی حقائق کو چھاپنے کی ناپاک کوشش ہے جو کسی بھی صورت منظور نہیں اور اس پابندی کی پرزور مذمت کرتے ہیں ۔ انھوں نے کہا کہ مشہور کشمیری مصنف سعید اسد نے اپنی پوری زندگی کشمیر اور کشمیری قوم کی تاریخ کو موجودہ نسل تک حقیقت کی صورت میں لانے کے لیے صرف کی ہوئی ہے اور ایک ماں کی سچی کہانی بھی اس مظلوم و محکوم قوم کے لیے ایک تاریخی تحفہ ہے جس کے ذریعے ہماری آنیوالی نسلوں کو بھی اپنے دوست اور دشمن کا اندازہ ہوتا رہے گا۔انھوں نے کہا کہ آزاد کشمیر میں اس کتاب پر پابندی لگانے سے ایسی ناپاک سازشیں کامیاب نہیں ہونگی چونکہ یہ کتاب اب بین الاقوامی سطح پر کشمیریوں کے پاس موجود ہے اور اب ان حقائق کو چھپایا نہیں جا سکتا۔انھوں نے مطالبہ کیا کہ ایک ماں کی سچی کہانی سے فوری طور پر پابندی اٹھائی جائے جبکہ انھوں نے اپنے بیان میں پروفیسر سعید اسدکو قوم کا اثاثہ قرار دیتے ہوئے انھیں اپنے مکمل تعاون کا یقین دلایا۔انھوں نے کہا کہ اب یہ کتاب پہلے سے بھی زیادہ مشہور ہو گئی ہے اور اس کی مانگ میں اضافہ ہوا ہے کشمیر کی آزادی کے دشمنوں کی چال نے کشمیریوں کو زیادہ سے زیادہ اس کتاب کے مطالعے کی دعوت دی ہے یوں ہماری موجودہ نسل غیر ملکی حملہ آوروں کی جانب سے ڈھائے جانے والے اس وقت کے مظالم سے مزید روشناس ہو گی اور یہی ہماری قومی ضرورت بھی ہے کہ ایسے حقائق نئی نسل کو منتقل ہوں تاکہ وہ اپنی آزادی کے لیے تحریک کو مزید تیز کر سکیں۔