مقبول خبریں
مدر فائونڈیشن گوجرخان کے روح رواں راجہ عرفان کی برطانیہ آمد پر انکے اعزاز میں استقبالیہ
ماحولیاتی آلودگی کے باعث بچہ ماں کے رحم میں مر جاتا ہے یا اسکی افزائش رک جاتی ہے: ایک تحقیق
پاک سر زمین پارٹی کے مرکزی جوائنٹ سیکرٹری محمد رضا کی زیر صدارت عہدیداران و کارکنان کا اجلاس
برطانوی شاہی جوڑے کی پاکستان میں زبردست پذیرائی، وزیر اعظم اور صدر مملکت سے ملاقاتیں
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
حلقہ ِ ارباب ِ ذوق کے ادبی پروگرام میں پاکستانیوں اور کشمیری کونسلرز کی بڑی تعداد میں شرکت
پارک ویو کمیونٹی سنٹر شہیر واٹر میں ہمنوا یو کے کے زیرِ اہتمام یوم آزادی پاکستان تقریب کا انعقاد
پروفیٹک گفٹس ویڈنگ اینڈ ایونٹس آرگنائزر کے زیر اہتمام ایشین ویڈنگ اینڈ پلانرز ایونٹ کا انعقاد
میرے تمام خواب نظاروں سے جل گئے
پکچرگیلری
Advertisement
شہباز شریف کیخلاف سپریم کورٹ میں ریفرنس دائر کرینگے: چیئرمین تحریک انصاف
اسلام آباد: چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے پارٹی رہنماؤں کے ساتھ مشاورتی اجلاس کے بعد بنی گالہ اسلام آباد میں اپنی رہائشگاہ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ایک بار پھر شریف خاندان اور وزیر اعظم کو خوب آڑے ہاتھوں لیا، کہتے ہیں صرف نواز شریف کا نہیں شہباز شریف کا بھی استعفیٰ مانگتے ہیں۔ عمران خان کا اسحاق ڈار اور ایاز صادق سے بھی مستعفی ہونے کا مطالبہ، بولے اسحاق ڈار نواز شریف کے فرنٹ مین ہیں، اسحاق ڈار نے ظفر حجازی کو چیئرمین ایس ای سی پی لگایا تھا، اب پتہ چل چکا ہے کہ قطری شہزادے کا خط فراڈ ہے، پہلے ہی قطری خط کا سارا پاکستان مذاق اڑا رہا تھا، وزیر اعظم، وزیر خزانہ اور سعید احمد منی لانڈرنگ میں ملوث ہیں، شہباز شریف بھی منی لانڈرنگ کرتے رہے، شہباز شریف نے التوفیق کے ساتھ سیٹلمنٹ کی تھی۔عمران خان نے مزید کہا کہ دبئی کے جسٹس ڈیپارٹمنٹ کے مطابق گلف سٹیل کے پاس پیسہ نہیں تھا، قطری کے پاس تو پیسہ گیا ہی نہیں، تصدیق شدہ کاپی مل گئی ہے کہ مریم نواز بینی فیشل اونر ہیں، جے آئی ٹی نے وہ کام نہیں کیا جو باقی اداروں نے ان کیلئے کیا، ان کے نزدیک چوری چھپانے والا ادارہ ہی ٹھیک ہے۔ عمران خان نے یہ بھی کہا کہ ظفر حجازی نے ڈاکیومنٹس میں ٹمپرینگ کی، آئی بی نے حسین نواز کو نکال کر ڈاکیومنٹس دیئے، آئی بی کا ادارہ مجرموں کی مدد کر رہا تھا، ٹیکس کے پیسے سے تنخواہ لینے والے 4 وزیر مجرم کو بچا رہے ہیں، مجرم کی حمایت کرنے والا بھی مجرم ہوتا ہے، جے آئی ٹی رپورٹ کے بعد ان لوگوں کو تو منہ نہیں دکھانا چاہئے، یہ کس منہ سے اب میڈیا میں جا رہے ہیں؟چیئرمین پی ٹی آئی کا یہ بھی کہنا تھا کہ یہ جتنے بہانے بنائیں گے مزید ذلیل ہوں گے، ان کے استعفے کافی نہیں، ان کا گھر اڈیالہ جیل ہے، ان کے بچے اربوں پتی ہیں، 90ء میں ان کے بچے طالبعلم تھے، اربوں پتی کیسے بن گئے؟ شہباز شریف ہیٹ پہن کر مافیا لگتا ہے، نواز شریف نے بیچارے اپنے باپ کو بھی پھنسا دیا، کوئی شرم ہونی چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ جب جے آئی ٹی کو خرید نہیں سکے تو کہتے ہیں کہ سازش ہے، موٹو گینگ کو شرم سے ڈوب جانا چاہئے، موٹو گینگ مجرموں کا دفاع کر رہا ہے۔ عمران خان نے یہ بھی کہا کہ ایاز صادق کو اگر اپنی عزت کا خیال ہے تو مستعفی ہو جائیں، سارا ٹبر چوریاں کر رہا ہے اور جھوٹ بول رہا ہے، نواز شریف نے پارلیمنٹ اور جے آئی ٹی میں جھوٹ بولا، یہ سارا خاندان پکڑا گیا ہے۔ عمران خان نے کہا کہ شہباز شریف کا بھی سیٹلمنٹ میں نام آ گیا ہے، شہباز شریف کیخلاف عدالت میں ریفرنس دائرکریں گے، اسحاق ڈار نے منی لانڈرنگ کا اعتراف کیا ہے۔