مقبول خبریں
سیرت النبیؐ کے پیغام کو دنیا بھر میں پہنچانے کے لئے میڈیا کا کردار اہم ہے:پیر ابو احمد
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
سعودی عرب میں کار ڈرائیونگ پرپابندی کے حوالے سےعورتیں ضد کی بنا پر نقصان کا شکار
ریاض ...سعودی عرب کے سخت ترین قوانین کی موجودگی میں خواتین کا کار چلانا ایک اچنبھے کی بات ہے لیکن سعودی عرب سے ملنے والی اطلاعات کے مطابق ملک میں خواتین کی ڈرائیونگ پر عائد پابندی کے خلاف بطور احتجاج 60 سے زائد خواتین نے سنیچر کوگاڑیاں چلا کر احتجاجی مہم میں حصہ لیا ہے۔ ان اطلاعات کی آزاد ذرائع سے تصدیق نہیں ہو سکی تاہم انٹرنیٹ پر شائع ہونے والی ویڈیوز میں چند خواتین کو ضرور گاڑی چلاتے دیکھا جا سکتا ہے۔ محض ایک روز قبل جمعہ کو سعودی عرب کی وزراتِ داخلہ کے ترجمان نے سعودی عورتوں کو خبردار کیا تھا کہ اگر کسی نے خواتین کی ڈرائیونگ پر عائد پابندی کے خلاف مہم میں حصہ لیا تو ان کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔ اس ہفتے کے اوائل میں دارالحکومت ریاض کی شاہی عدالت میں سو قدامت پرست علما نے لوگوں سے کہا تھا کہ وہ اس مہم کی مذمت کریں کیونکہ یہ عورتوں کی سازش اور ملک کے لیے خطرہ ہے۔ لیکن اسے معاملے پر 1990 میں ہونے والے دوسرے احتجاجی مظاہرے پر حکام کے رویّے سے معلوم ہوتا ہے کہ حکومت میں سخت گیر موقف رکھنے والے لوگ اب بہت کم ہیں۔