مقبول خبریں
مدر فائونڈیشن گوجرخان کے روح رواں راجہ عرفان کی برطانیہ آمد پر انکے اعزاز میں استقبالیہ
ماحولیاتی آلودگی کے باعث بچہ ماں کے رحم میں مر جاتا ہے یا اسکی افزائش رک جاتی ہے: ایک تحقیق
پاک سر زمین پارٹی کے مرکزی جوائنٹ سیکرٹری محمد رضا کی زیر صدارت عہدیداران و کارکنان کا اجلاس
برطانوی شاہی جوڑے کی پاکستان میں زبردست پذیرائی، وزیر اعظم اور صدر مملکت سے ملاقاتیں
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
حلقہ ِ ارباب ِ ذوق کے ادبی پروگرام میں پاکستانیوں اور کشمیری کونسلرز کی بڑی تعداد میں شرکت
پارک ویو کمیونٹی سنٹر شہیر واٹر میں ہمنوا یو کے کے زیرِ اہتمام یوم آزادی پاکستان تقریب کا انعقاد
پروفیٹک گفٹس ویڈنگ اینڈ ایونٹس آرگنائزر کے زیر اہتمام ایشین ویڈنگ اینڈ پلانرز ایونٹ کا انعقاد
میرے تمام خواب نظاروں سے جل گئے
پکچرگیلری
Advertisement
قومیں اسی طرح بنتی ہیں جس طرح وزیراعظم نے محنت کرکے اس قوم کو بنایا ہے:شہباز شریف
جھنگ:وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے کہا ہے کہ 2سال قبل وزیراعظم نوازشریف نے مخالفت کے باوجود 3600 میگاواٹ کے گیس پاور پلانٹس لگانے کا جرأت مندانہ فیصلہ کیا اور اس سیاسی بصیرت اور قوم کے مفاد میں کیا گیا یہ تاریخی فیصلہ 20 کروڑ عوام کیلئے درخشندہ مستقبل کا ضامن بنا ہے ، یہ فیصلہ نوازشریف کے سر پر تاج کی حیثیت رکھتا ہے ۔ اندھیروں کو اجالوں میں بدلنے ، زراعت کو ہرا بھرا کرنے ، صنعتوں کی چمنیوں سے دھواں نکالنے ، روزگار کے مواقع پیدا کرنے اور ترقی و خوشحالی کی ضمانت کا یہ فیصلہ عوام کبھی بھلا نہیں پائیں گے ۔ ایک طرف پانامہ کا بڑا شور ہے تو دوسری طرف وزیراعظم کا قوم کو اندھیروں سے نکال کر روشنیوں میں لانے کا اعمال نامہ ہے ۔پاناما کے افسانے کا اس اعمال نامے سے کوئی مقابلہ نہیں۔ پاناما کا افسانہ 4 ملین ڈالر جبکہ نوازشریف کی قیادت میں 3600 میگاواٹ کے 3 گیس پاور پلانٹس میں غریب عوام کے 168 ارب روپے بچائے گئے ہیں۔ ان کے اس اعمال نامے کو رہتی دنیا تک یاد رکھا جائے گا۔ عدالت عظمیٰ کا قانونی کیس ہے جس کا ہم بہت احترام کرتے ہیں اور اس کے ہر فیصلے کا بے حد احترام ہے ۔ قومیں اسی طرح بنتی ہیں جس طرح وزیراعظم نے دن رات محنت کرکے اس قوم کو بنایا ہے ۔ کوئی 168 ارب روپے کی بچت کی ایک مثال بھی سامنے لا کر بتا دے ۔ ایک طرف غریب قوم کے اربوں روپے بچانے والا مخلص لیڈر ہے اور دوسری طرف اس قوم کو کنگال کرنے والے ہیں جنہوں نے نیلم جہلم، نندی پور، رینٹل پاور کے نام پر لوٹ مار کی اور این آئی سی ایل اور بینکوں پر اربوں کھربوں کے ڈاکے ڈالے ۔اگرپاکستان کو آگے لے کر جانا ہے تو ہمیں سب کا کڑا احتساب کرنا ہوگا اور دودھ کا دودھ پانی کا پانی کرنا ہوگا۔وزیراعلیٰ نے ان خیالات کا اظہار جھنگ میں 1230 میگاواٹ کے حویلی بہادر شاہ گیس پاور پلانٹ کے پہلے مرحلے کے تحت 760 میگاواٹ کے یونٹ کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ شہبازشریف نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آج ایک تاریخی دن ہے جب 1230 میگاواٹ کے گیس پاور پلانٹ کا افتتاح کیا گیا ہے اور آج کی تاریخ بھی بڑی اہم ہے کیونکہ آج 7 ویں مہینے کی 7 تاریخ ہے اور 2017 کا سال ہے ۔ یہ دن پیغام دے رہا ہے کہ 7-7 اور 17ء مل کر چلنا ہے اور یہ ساتھ ساتھ مل کر ایک ساتھ چلنے کا دن ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بھکی، حویلی بہادر شاہ اور بلوکی گیس پاور پلانٹس کے تینوں منصوبوں میں 168 ارب روپے کی بچت کی گئی ہے ۔ میں آج فخر سے یہ کہنا چاہتا ہوں کہ ان منصوبوں میں تمام قوانین پر پوری طرح عمل کیا گیا اور بڈنگ کا عمل بھی مکمل ہوا اور ان منصوبوں کی شفافیت کی گواہی غیرملکی مہمان بھی دے رہے ہیں۔ پاکستان کی تاریخ میں وہ کام ہوا ہے جس کا اعتراف دنیا بھی کر رہی ہے اور جنرل الیکٹرک کے اعلیٰ حکام نے واضح طور پر کہا ہے کہ ایسی برق رفتاری اور شفافیت کی نظیر نہیں ملتی جبکہ دوسری جانب نندی پور کا منصوبہ بھی ہے جسے وزیراعظم نوازشریف نے قبر سے نکالا اور اس منصوبے میں بغیر نیلامی کے عمل کے ٹھیکہ دیا گیا اور انتہائی غیر قانونی کام ہوا۔ جو ادارے اور افراد اس غیر قانونی عمل کے ذمہ دار تھے ، انہیں ہتھکڑیاں لگنی چاہئیں تھیں اور جیلوں میں ہونا چاہئے تھا لیکن کسی نے ان کو نہیں پوچھا۔ نندی پور منصوبے کی مشینری 3 سال تک کراچی کی بندرگاہ پر گلتی سڑتی رہی اور پلانٹ کی مشینری اور پرزے چوری ہوئے اور چین سے دوبارہ پرزے منگوانا پڑے ۔ یہ منصوبہ سابق حکمرانوں کی کرپشن کی نذر ہوا اور اس منصوبے پر غریب قوم کے 15 سے 18 ارب روپے اضافی خرچ کرنا پڑے ۔ سپریم کورٹ کے کمیشن نے اس منصوبے کے بارے میں فیصلہ دیا کہ اس میں ڈاکہ زنی ہوئی ہے ۔ ایک شخص جو آج کل ٹیلی ویژن پر آ کر وعظ کرتے ہیں، عدالت نے اس کا نام لے کر کہا تھا کہ اس شخص نے اس منصوبے میں ڈاکہ زنی کی ہے ۔ اس کا احتساب ہونا چاہئے لیکن آج یہ شخص احتساب پارٹی میں شامل ہو چکا ہے ۔