مقبول خبریں
اولڈہم ٹاؤن میں پہلی جنگ عظیم کی صد سالہ تقریب،جم میکمان،مئیر کونسلر جاوید اقبال و دیگر کی شرکت
مشتاق لاشاری سی بی ای کا پورٹریٹ کونسل ہال میں لگا نے کی تقریب، بیگم صنم بھٹو نے نقاب کشائی کی
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
مقبوضہ کشمیر:شہید نوجوان سپرد خاک،احتجاج میں شدت،جھڑپوں میں35زخمی
سرینگر:بھارتی فوج کے ہاتھوں مقبوضہ کشمیر کے علاقے بامنو میں شہید 2نوجوانوں کو آبائی علاقوں میں سپرد خاک کر دیا گیا جبکہ قابض فوج نے ایک شہید کا جسد خاکی دینے سے انکار کر دیا جس پر عوام کے احتجاج میں مزید شدت آگئی اور بھارتی فورسز کیساتھ جھڑپوں میں مزید 35کشمیری زخمی ہو گئے ۔ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج نے گزشتہ روز بامنو میں دھماکے سے تباہ کئے گئے مکان کے ملبے سے ایک اور کشمیری کی لاش برآمد کرنے کا دعویٰ کیا ہے جس پر مقامی لوگوں نے بھارتی فوج سے شہید کا جسد خاکی ورثا کے سپرد کرنے اور اس کی شناخت ظاہر کرنے کا مطالبہ کیا تاہم فوج نے ایسا کرنے سے انکار کیا جس پر مقامی لوگ مشتعل ہوگئے اور انہوں نے فوجی کیمپ کے باہر احتجاج کیا اور اسلام و آزادی کے حق میں شدید نعرے بازی کی جبکہ آن لائن کے مطابق مکان کے ملبے سے ایک اور لاش کی تلا ش جارہی ہے ۔ دوسری جانب بھارتی فوج کے ہاتھوں شہید ہونیوالے کفایت احمد کھانڈے اور جہانگیرکی تدفین کر دی گئی اور بے گناہ شہریوں کی ہلاکت کیخلاف وادی سراپا احتجاج ہے ۔ملنگ پورہ میں بھارتی فوج کی جانب سے کریک ڈائون کی کوشش دوسرے روز بھی ناکام ہوگئی اور شہری بڑی تعداد میں باہر نکل آئے ۔ ایچھ گوز،بامنو،مست پورہ، ژون، ابہامہ، زرکن، زم پتھری،پکھرپورہ،چک کیلر اور اگلر کے علاوہ دیگر ملحقہ علاقوں سے بڑی تعداد میں لوگ جمع ہوئے اور انہوں نے فورس پر چاروں طرف سے شدید پتھراؤ کیا اور فورسز نے شیلنگ اور پیلٹ گن کے استعمال کیساتھ ساتھ گولیاں بھی چلائیں جس سے کم از کم35 افراد زخمی ہو گئے اور زخمیوں میں سے 5 کو گولیاں لگیں جبکہ باقی زخمیوں کو پیلٹ گن کے فائر لگے جن میں سے 5 کی حالت نازک بیان کی گئی ہے ۔ ادھر پلوامہ میں بھی زبردست جھڑپیں ہوئیں اور پورے قصبہ میں افرا تفری پھیل گئی،مکمل ہڑتال کے دوران ہر قسم کی آمد و رفت بند ہوگئی اور نظام زندگی معطل رہا ۔ دوسری جانب مقبوضہ کشمیر کے تاجروں نے ریاست میں بھارتی قانون جی ایس ٹی کے نفاذ کیخلاف منگل کو یوم سیاہ منایا ،دکانوں اور تجارتی اداروں پر سیاہ جھنڈے لہرائے گئے ، بھارتی فورسز کی بھاری تعداد نے ریاستی اسمبلی کے باہر تاجروں کے احتجاجی دھرنے کو طاقت کے زور پر ناکام بنا دیا اور تاجروں پر وحشیانہ تشدد کیا جس کے بعد تاجروں اور فوج میں جھڑپوں کے دوران درجنوں افراد زخمی ہوگئے اور درجنوں کو گرفتار کر لیا گیا ۔