مقبول خبریں
اولڈہم کے نوجوانوں کی طرف سے روح پرور محفل، پیر ابو احمد مقصود مدنی کی خصوصی شرکت
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
تمام کشمیری تعصبات سے بالاتر ہو کر اتحاد کا مظاہرہ کریں اور آزادی کے نکتے پر متفق ہو جائیں
سلائو ...جموں کشمیر کی تاریخ میں ماہ اکتوبر کی اہمیت کے حوالے سے اپنے تاثرات کا اظہار کرتے ہوئے بزرگ کشمیری رہنما مولانا محمد یعقوب چشتی نے کہاہے کہ ٢٤ اکتوبر کو دو دن کیلئے آزادی کا سورج دکھا کر تقدیر نے ٢٧ اکتوبر ١٩٤٧ کے بعد سے اب تک کشمیریوں کیلئے غلامی کا طویل سفر لکھ دیا ہے۔ 27اکتوبر کو بھارت نے کشمیر پر قبضہ کر کے لاکھوں کشمیریوں کے حقوق غصب کیے تھے اور اس نے یہ جارحانہ قبضہ اب تک قائم رکھا ہوا ہے۔ ایک بیان میں مولانا محمد یعقوب چشتی نے کہاکہ کشمیریوں کو اس روز متحد ہو کر بھارت کے خلاف مظاہرے کرنا چاہئیں او ر اس دن کو یوم سیاہ کے طور پر ہر جگہ منایا جانا چاہیے۔انہوں نے کہاکہ برطانیہ میں کشمیریوں کی بڑی تعدا د کمین ہے جو بھارتی ہائی کمیشن کے سامنے جمع کر دنیا بھر میں مسئلہ کشمیر کو اجاگر کر سکتی ہے ۔انہوں نے کشمیری رہنماوٴ ں سے کہاکہ وہ اتحاد کا مظاہرہ کریں اور کشمیر کی آزادی کے ایک نکتے پر متفق ہو جائیں۔ صدر کشمیر ایڈوائزری کونسل راجہ ایوب نے کہا ہے کہ اقوام متحدہ میں ریاست جموں و کشمیرکے حوالہ سے موجود قرادادوں کے مطابق ریاستی عوام کو حقِ رائے دیا جائے گا تاکہ وہ اپنے سیاسی مستقبل کا تعین کر سکیں ، بھارت اور پاکستان میں مذاکراتی عمل میں کشمیریوں کی شراکت کے بغیر کوئی بھی فیصلہ دیرپا ثابت نہیں ہو سکتا ، بھارتی وزیر اعظم من موہن سنگھ کا کشمیر کو بھارت کا اٹوٹ انگ کہنا کشمیر کے تنازع سے روح گردانی ہے ، اُنھوں نے کہاکہ سہ فریقی تنازع پر کسی بھی ملک کی پارلمینٹ خود ساختہ فیصلے کی مجاز نہیں ہو سکتی ،بھارت اپنے جارحانہ رویہ میں تبدیلی لائے تاکہ جنوبی ایشیا میں قیام امن کو یقینی بنانے میں آسانی ہو۔ جموں کشمیر لبریشن یو کے اینڈ یورپ کے صدر عظمت اے خان نے 24 اکتوبر 1947 آزاد کشمیر حکومت کے یوم تاسیس کے موقع پر پیغام دیتے ہوئے کہا کہ کشمیر کی آزادی کی خاطر کشمیری قوم بیدار ہے ضرورت اس بات کی ہے کشمیری کی دو طرفہ قیادت ون پوائنٹ ایجنڈے پر جمع ہوجائے انہوں نے کہا کہ آزاد حکومت کا قیام کا بنیادی مقصد مقبوضہ کشمیر کو آزاد کراتا تھا مگر آزاد کشمیر حکومت نے مقبوضہ کشمیر کی آزادی کیلئے سیاسی سفارتی عسکری تقاضے پورے نہیں کیے مہاراجہ ہری سنگھ کے کشمیر سے بھاگ جانے کے بعد کشمیریوں نے اس حکومت کی بنیاد رکھی اور اس حکومت کو سیاسی، سفارتی، عسکری طور پر وسعت دینا تھا ہماری بدقسمتی ہے کہ ہم 24 اکتوبر کی اصل روح سے بہت دور چلے گئے ہیں ۔