مقبول خبریں
سیرت النبیؐ کے پیغام کو دنیا بھر میں پہنچانے کے لئے میڈیا کا کردار اہم ہے:پیر ابو احمد
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
بالی ووڈ سٹار سنجے دت کو جلد کیوں رہا کیا گیا؟ ممبئی ہائیکورٹ نے سوال اٹھا دیے
ممبئی: انڈین میڈیا کے مطابق ممبئی ہائیکورٹ نے بالی ووڈ کے سپر سٹار سنجے دت کی رہائی پر سوالات اٹھا دیے ہیں۔ جج جج آر ایم ساونت اور سادھنا جادھو نے مہاراشٹرا حکومت سے اس معاملے میں جلد جواب داخل کرنے کو کہا ہے۔ عدالت کا کہنا ہے کہ ریاستی حکومت جواب دے کہ سنجے دت کو کس بنیاد پر جلد رہا کیا گیا اور کن معیارات سے اچھے رویے کا فیصلہ کیا جاتا ہے۔ عدالت نے سوال اٹھایا کہ جب سنجے دت اپنی سزا کا آدھے سے زیادہ وقت جیل سے باہر تھے تو جیل انتظامیہ کو ان کے رویے کا پتہ کس طرح چلا؟خیال رہے کہ 1993ء میں ممبئی بم دھماکوں کے دوران غیر قانونی ہتھیار رکھنے کے جرم میں سنجے دت کو 5 سال قید کی سزا دی گئی تھی۔ مئی 2013ء میں انہیں سپریم کورٹ سے سزا ملی اور وہ پونا کی يرواڈا جیل میں بند تھے، جہاں سے فروری 2016ء میں انہیں رہا کرتے ہوئے تقریباً 8 ماہ کی سزا کم کر دی گئی تھی۔دوسری جانب سنجے دت ان دنوں اپنی فلموں کی شوٹنگز میں مصروف ہیں جبکہ دھڑا دھڑ فلمیں بھی سائن کر رہے ہیں، لیکن اب لگتا ہے سنجے دت کی زندگی میں ایک اور بڑی خبر سامنے آ سکتی ہے۔