مقبول خبریں
برطانوی حکومت مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے اپنا اثر و رسوخ استعمال کرے:ایم پی جیوڈتھ کمنز
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
مسلم ایڈ کو انٹرنیشنل چیریٹی ایوارڈ ملنے پر کمیونٹی رہنمائوں کی ولائیت کھوکھر کو مبارکباد
لندن ...مسلم ایڈ نے حقیقی معنوں میں مصیبت زدگان کی مدد کی دنیا میں کہیں بھی کوئی آفت آئی مسلم ایڈ کے رضا کار فوری طور پر پہنچے اور امدادی کاروائیوں میں حصہ لیا اسی لئے اسے انٹرنیشنل ایوارڈ سے نوازا گیا جو ناصرف مسلم ایڈ بلکہ پوری انسانیت کو خراج تحسین ہے۔ اس اعزاز پر مسلم ایڈ کے تمام نمائندگان اور با الخصوص کمیونٹی رابطہ آفیسر ولائیت کھوکھر مبارکباد کے مستحق ہیں۔ ان خیالات کا اظہار کمیونٹی رہنمائوں ندیم علی میئر والتھم فاریسٹ، ورلڈ کانگریس آف اوورسیز پاکستانیز کے صدر ناہید رندھاوا، جنرل سیکریٹری ماجد اسماعیل، چوہدری اللہ دتہ سابق میئر ہائی ویکمب، چیئرمین کاروان فکر شاکر قریشی، سابق میئر ایلڈرشاٹ کونسلر سلیم چوہدری، سابق میئر والتھم فاریسٹ کونسلر لیاقت علی، معروف بزنس مین چوہدری شوکت علی، چوہدری دلپذیر، خواجہ ظہور احمد، چیئرمین والتھم فاریسٹ اسلامک ایسوسی ایشن الحاج راجہ اللہ دتہ، صدر چوہدری خالد، چوہدری طاہر علی گجر، کونسلی محبوب چوہدری و دیگر نے مسلم ایڈ برطانیہ کو اس کی بہترین کارکردگی کی وجہ سے انٹرنیشنل چیرٹی ایوارڈ ملنے کے بعد اپنے تاثرات میں کیا۔ چیرٹی ٹائمز ایوارڈز 2013ء کی ایک پُروقار تقریب میں مسلم ایڈ کے رابطہ افسر محمد ولایت کھوکھر ایم بی ای نے یہ ایوارڈ گورنمنٹ اینڈ چیرٹی مینجمنٹ کے ہیڈ آف سینئر پروفیسر الیگز مرڈوک سے وصول کیا۔ کمیونٹی رہنمائوں کا کہنا تھا کہ مسلم ایڈکو یہ ایوارڈ چیریٹی سرگرمیوں اور ان کے مختلف لوگوں پر پڑنے والے اثرات پر دیا گیا۔ تقریب میں مسلم ایڈ کے کام کو شاندار قرار دیا گیا اور اسے انسانیت کے لئے انتہائی مفید قرار دیا گیا۔ اس ایوارڈ کے سلسلے میں6خیراتی اداروں کو شارٹ لسٹ کیا گیا تھا اور مسلم ایڈ کا انتخاب آزاد و خودمختار ججوں کے ایک پینل نے کیا۔ اس حوالے سے مسلم ایڈ برطانیہ کے ایک ترجمان نے کہا ہے کہ مسلم ایڈ کی خدمات کا اعتراف کرنے اور اسے انتہائی باوقار ایوارڈ دیا جانا یقیناً ادارے کے تمام کارکنوں کے لئے قابل فخر بات ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس کامیابی میں مسلم ایڈ کے ڈونرز اور سپورٹرز کا بڑا ہاتھ ہے جو اس کے ساتھ بھرپور تعاون کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس ایوارڈ کے پیچھے مسلم ایڈ کے ٹرسٹیز، شراکت داروں، فیلڈ سٹاف اور دوسرے عہدیداروں کی محنت بھی شامل ہے جو انتھک انداز میں اس کی خدمت کررہے ہیں۔ اس موقع پر محمد ولایت کھوکھر ایم بی ای نے کہا کہ کسی مسلم چیرٹی کو اس قسم کا ایوارڈ ملنا انتہائی بڑا اعزاز ہے اور مسلم ایڈ گزشتہ 28برس سے جو شاندار کام کررہا ہے اس کا اعتراف کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مسلم ایڈ کے سٹاف اور رضاکاروں کی مدد کے بغیر اس طرح کی کامیابی کا تصور بھی نہیں کیا جاسکتا۔ انہوں نے کہا کہ مسلم ایڈ اپنے اس شاندار کام کو جاری رکھے گا۔