مقبول خبریں
عبدالباسط ملک کے والدحاجی محمد بشیر مرحوم کی روح کے ایصال ثواب کیلئے دعائیہ تقریب
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
میاں جی کی لڑکیاں
پکچرگیلری
Advertisement
دہشت گردی کے الزام سےرہائی پانے والے نویدبلوچ کا برطانوی قانون انصاف کو خراج تحسین
لندن ...برطانوی سیکیورٹی ایجنسی کی کاروائی سے دہشت گردی کے شبے میں گرفتار ہونے اور رہائی پانے والے پاکستانی نژاد نوید بلوچ نے لندن میں فرینڈز آف لیاری کے کنوینر حبیب جان کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ ان کاکبھی برطانیہ یا پاکستان کے کسی دہشت گرد گروپ یا کسی طرح کے گینگ وارسے کوئی تعلق نہیں رہا۔ نوید بلوچ نے اپنے گھر پر پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے برطانیہ کے نظام انصاف کاشکریہ اد ا کیا جس نے انھیں بری کیالیکن اس کے ساتھ ہی کہا کہ ان کی گرفتاری کے حوالے سے کی گئی تشہیر اور ان کے خلاف لگائے جانے والے الزامات کے سبب پاکستان میں ان کے اہل خانہ کی زندگی کوخطرہ لاحق ہوگیا ہے، اور اب وہ ان کے بارے میں فکر مند ہیں۔ انھوں نے کہا کہ جب برطانوی پولیس نے میرے فلیٹ کادروازہ توڑ کر میرے بچوں کے سامنے مجھے گرفتار کیاتو میں حیرت زدہ رہ گیاتھا، میں خوفزدہ اور ذہنی دباؤ کاشکار تھا مجھے کچھ پتہ نہیں تھا کہ تفتیش کاروں اس بہیمانہ طریقے سے میرے گھر پر دھاوا کیوں بولا؟ میں مسلسل ذہنی دباؤ کا شکار تھا مجھے یقین نہیں آرہاتھا کہ مجھ پر ان ناپسندیدہ لوگوں سے تعلق رکھنے کاالزام عاید کیاجائے گا انھوں نے اس بات پر احتجاج کیا کہ میری ایک ہفتے کی حراست کے دوران میڈیا نے مجھ سے وہ باتیں منسوب کیں جن کامجھے علم تک نہیں، میرے بارے میں میڈیا میں جھوٹ بولاگیا،میں برطانوی نظام انصاف کا شکر گزار ہوں لیکن پاکستان کے مختلف میڈیا میں میری ذاتی زندگی کے بارے میں جو کچھ کہاگیااس کی مذمت کرتاہوں۔