مقبول خبریں
اولڈہم کے نوجوانوں کی طرف سے روح پرور محفل، پیر ابو احمد مقصود مدنی کی خصوصی شرکت
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
صحافتی تنظیموں کا دوران ڈیوٹی صحافیوں پر حملہ آور ہونے والوں کے مکمل بائیکاٹ کا فیصلہ
لندن ... برطانیہ میں ایتھنک میڈیا سے وابستہ صحافی دوہری ذمہ داریاں اداکرتے ہوئے دیگر میڈیا پرسنز سے زیادہ فرائض سرانجام دے رہے ہیں ۔انہیں برطانیہ کے تقدس کا بھی خیال ہے اور متعلقہ امیگرینٹس کمیونیٹیزکے حقوق بھی انکے پیش نظر ہیں، ان صحافیوں سے اپنے مطلب کے نتائج لینے کیلئے دباؤاور دھونس جیسے کسی حربے کو برداشت نہیں کیا جاسکتا، کمیونٹی اور وطن کی حرمت اپنی جگہ لیکن طاقت کے نشے میں چورکسی فرد کی جانب سے غلط زبان کے استعمال اور ہاتھا پائی کو صحافی کسی صورت قبول نہیں کرسکتے۔۔ ان جذبات کا اظہار لندن کے برٹش پاکستانی صحافیوں نے ایک ہنگامی اجلاس میں کیا جس میں پاکستان پریس کلب یوکے، پاکستان جرنلسٹ ایسوسی ایشن، انٹرنیشنل پاکستانی جرنلسٹ آرگنائزیشن سمیت دیگر صحافیوں نے شرکت کی۔ یہ اجلاس دو صحافی ساتھیوں ودود مشتاق اور اسد علی پر کچھ کمیونٹی شخصیات کی طرف سے ایک تقریب میں دھمکیوں اور ہاتھا پائی کے بعد بلایا گیا تھا۔ تمام تفصیلات حاصل کرنے اور بحث و مباحثے کے بعد یہ طے پایا کہ جھگڑے کے موقع پر پہلے تو مسجد کے تقد س کیلئے پولیس کو رپورٹ نہیں کی گئی لیکن اب سب سے پہلے یہ رپورٹ ہونی چاہیئے اسکے بعد ورکنگ جرنلسٹس کی قومی تنظیم نیشنل یونین ٓف جرنلسٹس کو شکائت کی جائے گی جس طرح اس وقوعہ میں لیبر پارٹی اور چیریٹی سے وابستہ افراد شامل ہیں اسی طرح دونوں اداروں کیساتھ ساتھ پاکستان ہائی کمیشن میں بھی انکی شکائت کرتے ہوئے ہر اس تقریب کا بائیکاٹ کیا جائے گا جس میں لیبر پارٹی کے نثار ملک اور مسجد کمیٹی کے مسٹر سکندر شامل ہونگے۔ اجلاس میں دونوں متاثرہ صحافیوں ودود مشتاق اور اسد علی کے علاوہ مبین چوہدری، مرتضیٰ شاہ، عطا الحق، نوید چوہدری، رضا سید، عدنان خان، اکرم عابد، افضل چوہدری، فاخر اسلام طاہر، انعام سہگل، طارق خان، حنیف آصف، اعجاز احمد، فرید قریشی، رانا سرفراز اور عمران چوہدری نے شرکت کی اور اپنے متاثرہ ساتھیوں کو یقین دلایا کہ مشکل کی ہر گھڑی میں انکے ساتھ ہیں۔