مقبول خبریں
اولڈہم کے نوجوانوں کی طرف سے روح پرور محفل، پیر ابو احمد مقصود مدنی کی خصوصی شرکت
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
پاکستان کو آج تک کوئی لیڈر نہیں مل سکا،اگرصحیح لیڈرمل جائے تو ملک بہت ترقی کرے:ایس ایم ظفر
لندن ... پاکستان ہیومن رائٹس سوسائٹی یوکے چیپٹر کے چیئرمین احمد شہزاد او بی ای کی طرف سے اپنے اعزاز میں منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سابق وفاقی وزیر اور انسانی حقوق کے ممتاز علمبردار ایس ایم ظفر نے کہا ہےکہ تمام خرابیوں کے باوجود پاکستان ترقی کررہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان نے امریکہ کی مخالفت کے باوجود چین کے ساتھ دوستی کی ہے اور چین پاکستان کا بہترین دوست ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان خود دہشت گردی کاشکار ہے۔ امریکہ پاکستان کی مدد کے بغیر افغانستان سے نکل نہیں سکتا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں ابھی تک کوئی صحیح لیڈر نہیں آیا۔ اگر ہمیں صحیح لیڈرمل جائے تو ملک ترقی کرے گا۔ ایس ایم ظفر کا مزید کہنا تھا کہ قوم کوآج تکلیف کل ریلیف کا لولی پاپ دے کر بیوقوف بنایا جارہا ہے۔اس بات کی ضمانت بھی نہیں دی جارہی کہ آج عوام تکلیف سہہ لیتے ہیں تو کل انہیں ریلیف ملے گا بھی یا نہیں۔ ایک سوال پر ایس ایم ظفر نے کہا کہ انتہا پسندی اور ٹارگٹ کلنگ نے ملک کوتباہ کرکے رکھ دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اے پی سی میں تمام لیڈروں نے حکومت کو طالبان سے مذاکرات کا اختیار دیا ہے مگر کوئی دوسرا آپشن نہیں دیاگیا کہ اگر مذاکرات ناکام ہوئے تو پھر کونسا آپشن استعمال کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ملالہ یوسف زئی، کائنات اور شازیہ کو سب سے پہلے ان کی تنظیم نے ایوارڈز سے نوازا ۔ لارڈ نذیر احمد نے کہا کہ کراچی میں ایک پارٹی نے دہشت گردی کو فروغ دیا ہے اور میڈیا میں بھی دہشت گردی شامل کر دی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ برطانیہ کی پاکستانی نئی نسلوں کا رابطہ پاکستان سے ٹوٹ رہا ہے۔ اس تعلق کو قائم کرنا ہوگا۔ احمد شہزاد او بی ای نے کہا کہ برطانیہ میں پاکستانی کمیونٹی نے شاندار ترقی کی ہے۔ آج اس کے ارکان پارلیمنٹ کے ساتھ ساتھ سیکڑوں کونسلرز میئرز وغیرہ موجود ہیں۔ انہوں نے اس بات پر افسوس کا اظہار کیا کہ اوورسیز پاکستانیوں کو وہ عزت نہیں دی جاتی جس کا وہ مستحق ہیں۔ ان کی زمینوں جائیدادوں پر قبضہ کرلیا جاتا ہے۔ انہیں برطانیہ میں ویزے اور دوسرے مسائل کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ چوہدری محمد سرور نے پہلا مسلمان ایم پی، لارڈ نذیر احمدنے پہلا لارڈ اور بیرسٹر صبغت اللہ قادری نے پہلا کیوسی بن کر تاریخ رقم کی ہے۔ سینیٹر طارق عظیم نے کہا کہ اوورسیز پاکستانیوں نے یہاں پر بہت محنت کی ہے۔ لارڈ قربان حسین نے کہا کہ پاکستانی میڈیا کے بعض دفع منفی خبریں دیتے ہیں۔ اس سلسلے کو بند ہونا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ میڈیا کے اندر بھی بعض غیر ہنرمندلوگ آگئے ہیں۔ تقریب سے بیرسٹر صبغت اللہ قادری، بیرسٹر یوسف اختر، شیخ مسلم سربلند اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔ تقریب میں طارق ڈار، حبیب جان، راجہ محمد ریاض، کونسلر خورشید، عبدالمجید شاہین، ڈاکٹر خالد محمود، نوید خان، عشرت ملک، محمود ڈار، زاہد بشیر، فدا حسین بٹ، اقبال جیولراور دیگر موجود تھے۔ (رپورٹ و تصاویر: اکرم عابد)