مقبول خبریں
برطانوی حکومت مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے اپنا اثر و رسوخ استعمال کرے:ایم پی جیوڈتھ کمنز
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
علامہ محمد اقبال کی 79 ویں برسی کے موقع پر پاکستان ہائی کمیشن میں محفل مشاعرہ
لندن:شاعر مشرق علامہ محمد اقبال صرف مسلم دنیا کے رہنما ہی نہیں بلکہ انسانیت کے ایک بڑے علمبردار بھی تھے، انکی سوچ اور فلسفے سے ایک دنیا نے استفادہ کیا، ہمیں فخر ہے کہ اسی عظیم ہستی نے سرزمین ہند پر مسلمانان برصغیر کیلئے ایک الگ مملکت کا خواب دیکھا جسے بعد میں وطن پاکستان کی تعبیر ملی، آج اس عظیم ہستی کا یوم عفات مناتے ہوئے ہم انہیں خراج عقیدت پیش کرتے ہیں کہ انہوں نے اپنی شاعری کے ذریعے ایک دنیا کو علم و آگہی دی، ان خیالات کا اظہار ،مقررین نے عظیم فلسفی شاعر علامہ اقبال کی 79 ویں برسی کے موقع پر پاکستان ہائی کمیشن لندن میں منعقد کی گئی ایک محفل مشاعرہ میں انہیں شاندار خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کیا۔ ہائی کمیشن نے اس تقریب کا اہتمام اردو مرکز لندن کے اشتراک سے کیا۔ تقریب ہائی کمیشن کی جانب سے 70 ویں یوم آزادی کے سلسلے میں کی جانے والی سرگرمیوں کا حصہ تھی۔ علامہ اقبال کی یاد منانے کے ساتھ ساتھ اس مشاعرہ کا مقصد پاکستان کی ادبی ثقافت کو فروغ دینا اور برطانیہ میں رہنے والی پاکستانی کمیونٹی میں احساس تفاخر، تعلق اور امید کو تقویت دینا تھا۔ قائمقام ہائی کمشنر زاہد حفیظ چوہدری نے تقریب کی صدارت کی۔ پورے برطانیہ سے آئے ہوئے شعراء نے موقع کی مناسبت سے اپنی نظمیں اور غزلیں پیش کیں اور حاضرین سے خوب داد وصول کی۔ اقبالیات کے معروف سکالرز پروفیسر ڈاکٹر محمد شریف بقاء ، پروفیسر افتخار ملک اور بیرسٹر سلیم قریشی نے علامہ اقبال پر مختصر گفتگو کی اور شرکاء کو ان کی زندگی، فلسفے اور شخصیت کے مختلف پہلوئوں سے روشناس کرایا۔ براڈکاسٹر دردانہ انصاری او بی ای نے اپنی مدھ بھری آواز میں علامہ اقبال کی نظمیں پیش کیں اور حاضرین کو محظوظ کیا۔ اپنے استقبالیہ کلمات میں قائمقام ہائی کمشنر نے علامہ اقبال کی شاعری اور فلسفے کے مختلف پہلوئوں بالخصوص اقبال کی آفاقیت، امید کے پیغام، برصغیر کے مسلمانوں کے لئے ان کے الگ وطن کے خواب اور ایک عظیم رہنما کی حیثیت سے ان کے کردار پر بات کی۔ انہوں نے شرکاء کو مختلف بین الاقوامی مالیاتی اداروں کی پیش گوئیوں کی روشنی میں پاکستان کی مثبت معاشی صورتحال کے بارے میں بھی آگاہ کیا۔ زاہد چوہدری نے شعراء اور سکالرز کو قومی زبان کی خدمت اور پاکستان کے ساتھ محبت کا پیغام پھیلانے کے لئے ان کی کوششوں اور محنت پر خراج تحسین پیش کیا۔ اردو مرکز لندن اور اس کے چیئرمین ڈاکٹر جاوید شیخ کے کردار کو سراہتے ہوئے قائمقام سفیر نے اردو زبان اور پاکستانی ثقافت کے فروغ کے لئے مشن کے پختہ عزم کا اعادہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ ہائی کمیشن برطانیہ میں اپنی کمیونٹی کو تعمیری انداز میں ساتھ ملانے کے لئے ثقافتی سرگرمیوں کے سلسلے میں ایک پلیٹ فارم کا کردار ادا کرتا رہے گا۔ شعراء میں رخسانہ رخشی، عائشہ غازی، نجمہ عثمان، محسنہ جیلانی، غالب مجیدی، سلیم فگار، شہباز خواجہ، باسط کانپوری، یشاب تمنا، عقیل دانش، سیمی برلاس اور احسن ظفر زیدی شامل تھے۔ ڈاکٹر جاوید شیخ اور زاہد جتوئی، فرسٹ سیکرٹری نے تقریب کی میزبانی کے فرائض انجام دئیے۔ پاکستانی کمیونٹی اور میڈیا کے نمائندوں کی ایک بڑی تعداد نے مشاعرہ میں شرکت کی۔