مقبول خبریں
مئیر کونسلر جاوید اقبال کی طرف سے نسیم اشرف اور قاری محمد بلال کو تعریفی سرٹیفکیٹ سے نوازا گیا
پیپلزپارٹی کے رہنما ندیم اصغر کائرہ کی پریس کانفرنس ،صحافیوں کے سوالات کے جوابات دیئے
واجد خان ایم ای پی کا آزاد کشمیر سے آئے حریت کانفرنس کے رہنمائوں کے اعزاز میں عشائیہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے زیر اہتمام پہلی کشمیر کلچرل نمائش کا اہتمام
دسمبر بے رحم اتنا نہیں تھا!!!!!!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
مقبوضہ کشمیر کی حکمران جماعت کا رہنماء قتل، حالات کشیدہ ، شدید لاٹھی چارج
سرینگر: مقبوضہ کشمیر میں طلبہ ایک بار پھر سڑکوں پر نکل آئے۔ کشیدگی کے باعث کئی دن بند رہنے کے بعد تعلیمی ادارے آج کھل گئے تھے۔ ایس پی ہائیر سیکنڈری سکول کے طلبہ نے بھارتی مظالم کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے کلاس میں بیٹھنے سے انکار کر دیا۔ سکول کے طلبہ نے مولانا آزاد روڈ کی جانب مارچ کیا تو پولیس روکنے کے لیے پہنچ گئی۔ اس دوران جھڑپوں میں درجنوں طالب علم زخمی ہو گئے۔ دوسری جانب گورنمنٹ ڈگری کالج فار گرلز کی طالبات بھی مولانا آزاد روڈ پہنچ گئیں اور آزادی کے حق میں نعرے بلند کیے۔ مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے پولیس نے شدید لاٹھی چارج اور آنسو گیس کی شیلنگ کی۔ قابض افواج نے مزید کشیدگی کے پیش نظر سرینگر کا لال چوک رکاوٹیں لگا کر بند کر دیا۔دوسری جانب مقبوضہ کشمیر کے ضلع پلوامہ میں حکمران جماعت پی ڈی پی کے مقامی رہنماء عبد الغنی ڈار کو نامعلوم افراد نے گولی مار کر ہلاک کر دیا۔ واقعے کے بعد وادی کی صورتحال مزید کشیدی پیدا ہو گئی۔ یہ واقعہ نئی دہلی میں وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی کی انڈین وزیر اعظم نریندر مودی کے ساتھ ملاقات کے فوراً بعد پیش آیا جس میں محبوبہ نے مودی کے ساتھ کشمیر کی صورت حال پر تبادلہ خیال کیا۔ ابھی تک کسی نےعبدالغنی ڈار کے قتل کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے۔