مقبول خبریں
سیرت النبیؐ کے پیغام کو دنیا بھر میں پہنچانے کے لئے میڈیا کا کردار اہم ہے:پیر ابو احمد
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
مقبوضہ کشمیر:مودی کے دورہ پرہڑتال کا اعلان،پلوامہ میں 12نوجوان گرفتار
سری نگر:حریت رہنماؤں نے بھارتی وزیراعظم نریندرمودی کے دورہ جموں کشمیر پر شٹرڈاؤن ہڑتال کا اعلان کر دیا ہے ۔ حریت قیادت کے مطابق مودی کی 2اپریل کوٹنل کا افتتاح کرنے کے سلسلے میں آمد پر مکمل شٹرڈاؤن کیا جائے گا۔ دریں اثنا بھارتی پولیس نے بھارت مخالف مظاہروں کی پاداش میں ضلع پلوامہ کے علاقے آری ہل سے کم سے کم12 نوجوانوں کو گرفتار کرلیا ہے ۔ گرفتاریوں پرحریت رہنمائوں نے اظہارمذمت کیا ۔میرواعظ عمرنے کہا ہے کہ بھارت نوشتہ دیوار پڑھ لے ۔انہوں نے چاڈورہ میں شہید نوجوانوں کو خراج عقیدت بھی پیش کیا ہے ۔کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق پلوامہ میں پولیس نے گزشتہ شب گاؤں میں رات کے وقت چھاپوں کے دوران 12 نوجوانوں کو بھارت مخالف مظاہروں میں شرکت کرنے پر گرفتار کرلیا۔گزشتہ ہفتے پولیس نے ضلع کے مختلف دیہات سے کم سے کم ساٹھ سے زائد نوجوانوں کو گرفتار کیا تھا۔سیدعلی گیلانی ، میر واعظ عمر فاروق اور محمد یاسین ملک پر مشتمل مشترکہ حریت قیادت نے چھاپوں کے دوران نوجوانوں کی گرفتاری پر کٹھ پتلی انتظامیہ کی شدید مذمت کی ہے ۔ حریت قیادت نے نوجوانوں کے خلاف کریک ڈاؤن کو بھارتی ریاستی دہشت گردی قراردیا ہے ۔دریں اثنا حریت فورم کے چیئرمین میر واعظ عمر فاروق نے چاڈورہ میں نہتے کشمیریوں پر بھارتی فورسز کی فائرنگ کے نتیجے میں تین نوجوانوں کے قتل اور درجنوں کو شدید زخمی اور پیلٹ گن کے استعمال سے کئی افراد کی بینائی متاثر ہونے کی شدید مذمت کی ہے ۔ انہوں نے ایک بیان میں کہاکہ بھارت اور اس کی کٹھ پتلی انتظامیہ کشمیرمیں تمام مسلمہ جمہوری اور انسانی اصولوں کو بالائے طاق رکھ کرنہتے کشمیریوں کا قتل عام کررہی ہے ۔ انہوں نے تینوں نوجوانوں کے قتل کے بعد کٹھ پتلی وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی کی طرف سے اظہار افسوس کو کشمیریوں کے ساتھ ایک بھونڈا مذاق قراردیتے ہوئے کہاکہ وہ خود ان نوجوانوں کے قتل کی ذمہ دار ہیں۔