مقبول خبریں
برطانوی حکومت مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے اپنا اثر و رسوخ استعمال کرے:ایم پی جیوڈتھ کمنز
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
حریت قائدین کو نئی دہلی میں یومِ پاکستان کی تقریب میں شرکت سے روکدیا گیا
سرینگر: چیئرمین حریت کانفرنس سید علی گیلانی اور دوسرے کئی قائدین کو نئی دہلی میں یومِ پاکستان کی تقریب میں شرکت سے روک دیا ۔علی گیلانی کے علاوہ شبیر احمد شاہ، محمد اشرف صحرائی، ایاز اکبر، الطاف احمد شاہ، راجہ معراج الدین، محمد اشرف لایا اور عمر عادل ڈار کو بدستور اپنے گھروں یا پولیس تھانوں میں نظربند کیا گیا ، جبکہ نعیم احمد خان کو اس وقت گرفتار کیا گیا جب وہ نئی دہلی روانہ ہونے کے لیے سرینگر ائیرپورٹ پہنچ گئے تھے ۔ حریت ترجمان نے اس کارروائی کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ یہ آوٹ آف فرسٹیشن لیا گیا فیصلہ ہے اور اس کا کوئی آئینی یا اخلاقی جواز نہیں ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ایک ایسے وقت میں جب بھارت اور پاکستان کے ساتھ مذاکرات کی بحالی کا ساری دنیا میں ڈھنڈورا پیٹ رہا ہے ، حریت لیڈروں کو اس فنکشن میں شرکت سے روکنا ناقابل فہم ہے ،ترجمان نے کہا کہ اس طرح سے پاکستان کا کوئی نقصان کیا جاسکتا ہے اور نہ حریت لیڈروں کی عوامی مقبولیت کو متاثر کیا جانا ممکن ہے ۔ کشمیری اور پاکستانی ‘‘دو قالب ایک جان’’ کی مانند ہیں اور انہیں ایک دوسرے سے جُدا نہیں کیا جاسکتا ہے ۔