مقبول خبریں
عبدالباسط ملک کے والدحاجی محمد بشیر مرحوم کی روح کے ایصال ثواب کیلئے دعائیہ تقریب
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
میاں جی کی لڑکیاں
پکچرگیلری
Advertisement
مقبوضہ کشمیر:طالب علم کی شہادت ، مظاہرے،پاکستانی پرچم لہرادئیے گئے
سرینگر:مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فورسز نے شہریوں پر زندگی تنگ کر دی،اٹھ مقام میں طالب علم کی شہادت کے بعد مظاہرے پھوٹ پڑے ،کئی مقامات پر پاکستانی پرچم لہرادئیے گئے ،حریت قیادت نے ضمنی الیکشن کے بائیکاٹ کی اپیل کردی،حریت رہنما سید علی گیلانی، میر واعظ، یاسین ملک کو گھروں میں نظر بند کردیا گیا ،میڈیا کارکنوں پر تشدد کیخلاف سرینگر میں صحافیوں کااحتجاج ،حریت قائدین کی گرفتاریوں پر آسیہ اندرابی کی مذمت، فاروق عبداللہ نے بھی امن کی اپیل کر دی ۔تفصیل کے مطابق بھارتی فوج نے اٹھ مقام کیرن میں آپریشن کے دوران طالب علم کو شہید کر دیا جس کے بعد عوام نے بھارت کے خلاف زبردست نعرے لگائے اور پاکستانی جھنڈے لہرا دئیے ۔ آزادی پسندقائدین سیدعلی گیلانی ،میرواعظ عمرفاروق ، یاسین ملک اور شاہد السلام کو گھر وں میں نظر بند کر دیا گیا ہے ، علی گیلانی ،میرواعظ کو نماز جمعہ ادا کرنے کی اجازت بھی نہیں دی گئی ۔مقبوضہ کشمیرمیں ہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن نے سینئر حریت قیادت کی گرفتاری اور نظربندی کی شدید مذمت کی ہے ۔ سرینگرمیں صحافیوں اورفوٹو جرنلسٹوں پر پولیس کے حملے اور تشدد کے خلاف پریس کالونی میں احتجاجی مظاہرہ کیا گیا اورتشدد میں ملوث اہلکاروں کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کیا گیا ۔ بھارتی فوجیوں کے ہاتھوں کپواڑہ میں 7سالہ بچی کی شہادت اور اسکے کم سن بھائی کو شدید زخمی کرنے کے خلاف نما ز جمعہ کے بعد جامع مسجد سرینگر کے باہر پر امن احتجاجی مظاہرہ کیاگیا ۔مظاہرے میں آزادی پسند کارکنوں کے علاوہ بڑی تعداد میں لوگوں نے شرکت کی ۔ مظاہرے کی قیادت حریت رہنمائوں غلا م نبی زکی ، فاروق احمد سوداگر ، سہیل احمد وارنے کی ۔انہوں نے اپنے خطاب میں کہاکہ سید علی گیلانی ، میر واعظ عمر فاروق اور محمدیاسین ملک پر مشتمل حریت قیادت نے بھارت کے آئندہ ضمنی پارلیمانی انتخابات کا مکمل بائیکاٹ کر نے اور 9 اور 12 اپریل کو وسطی اور جنوبی کشمیرمیں مکمل ہڑتال کرنے کی اپیل کی ہے ۔ سید علی گیلانی، میر واعظ عمر فاروق اور محمدیاسین ملک نے ایک بیان میں کہا ہے کہ 10لاکھ سے زائد بھارتی فوجیوں کی موجودگی میں انتخابی ڈھونگ کی کوئی ساکھ اور وقعت نہیں ، یہ جمہوری عمل کے بجائے محض ایک فوجی آپریشن ہے اور بھارت اس کو اپنے جبری قبضے کے حق میں جواز کے طور پر پیش کرکے عالمی برادری کو گمراہ کرتا ہے ۔ مقبوضہ کشمیرمیں سر پنچوں نے بھی بھارت کے نام نہاد پارلیمانی انتخابات کا بائیکاٹ کردیا ہے ۔ دختران ملت کی سربراہ آسیہ اندرابی نے کہا سید علی گیلانی ، میر واعظ عمر فاروق اورمحمد یاسین ملک کی گرفتاری اس بات کا واضح ثبوت ہے کہ ریاست جموں و کشمیر ایک پولیس ریاست ہے ۔مقبوضہ کشمیر کے سابق وزیر اعلٰی ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے بھارت اور پاکستان کے سربراہوں سے اپیل کی ہے کہ وہ سرحدوں پر امن کی فضا قائم کرنے کیلئے ٹھوس اقدامات اٹھائیں۔ انہوں نے کہا کہ امن میں ہی سب کی بھلائی ہے ۔