مقبول خبریں
مئیر کونسلر جاوید اقبال نےرضاکارانہ خدمات پرتنظیم وائی فائی کو تعریفی سرٹیفکیٹ اور شیلڈ سے نوازا
پیپلزپارٹی کے رہنما ندیم اصغر کائرہ کی پریس کانفرنس ،صحافیوں کے سوالات کے جوابات دیئے
واجد خان ایم ای پی کا آزاد کشمیر سے آئے حریت کانفرنس کے رہنمائوں کے اعزاز میں عشائیہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے زیر اہتمام پہلی کشمیر کلچرل نمائش کا اہتمام
دسمبر بے رحم اتنا نہیں تھا!!!!!!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
آئی سی سی کا اجلاس ختم، محمد عامر پر لگی پابندی برقرار، جنوری 2014 میں پھر ریویو ہوگا !!
لندن ... برطانوی دارالحکومت میں ہونے والی آئی سی سی بورڈ میٹنگ میں پاکستان کے نوجوان کرکٹر محمد عامر پر لگی پابندی کے حوالے سے نرمی کا فیصلہ نہ ہو سکا۔ پاکستان کرکٹ بورڈ چاہتا تھا کہ محمد عامر پر لگی پانچ سالہ پابندی میں اتنی نرمی کر دی جائے کہ وہ ڈومیسٹک کرکٹ کھیل سکیں تاکہ پابندی ہٹتے ہی وہ انٹرنیشنل کرکٹ میں اپنے فطری جوہر دکھاسکیں۔ انٹرنایشنل کرکٹ کونسل ک برڈ آف ڈائریکٹرز نے جنہاں متعدد فیصلے حتمی طور پر طے کر دئے وہیں محمد عامر کے فیصلے کو جنوری ٢٠١٤ کی میٹنگ سے مشروط کر دیا ہے جس میں اینٹی کرپشن کوڈ کا اعادہ کرتے ہوئے اسے سمجھنے میں مزید سہل مگر جانچنے میں زیادہ کڑا کردیا جائے گا۔ بورڈ حکام کا کہنا تھا کہ جیوری ٢٠١٤ کے اس اجلاس میں جو تبدیلیاں کی جائیں گی انہیں مد نظر رکھ کر ہی محمد عامر کیلئے بھی فیصلہ ممکن ہوگا۔ اس اجلاس میں بورڈ ممبران کو دوبئی مین چیف ایگزیکٹوز کے اجلاس کے بارے میں بھی بریف کیا گیا، جبکہ میچز میں خراب لائٹ اور ریویو کے حوالے سے بھی متعدد امور پر غور کیا گیا جبکہ اگلے سال بنگلہ دیش میں ہونے والے ٹی20 ورلڈ کپ کیلئے بنگلہ دیش کو چند امور میں مہلت دی گئی۔ بورڈ نے آئی سی سی انڈر ١٩ ورلڈ کپ کے شیڈول کو بھی فائنل کیا جو ١٤ فروری سے یکم مارچ متحدہ عرب امارات میں ہوگا۔ محمد عامر پر لگی پابندی میں نرمی کے حوالے سے بھارت جوسخت تشویش میں مبتلا تھا نے اب سکھ کا سانس لیا ہے۔ اپنے پریمئر لیگ کے چند غیر معروف کھلاڑیوں پر لگی پابندی کا حوالہ دیکر انڈین میڈیا چیخ رہا ہے کہ ایک طرف تو بھارت اپنے کھلاڑیوں ایس سری ناتھ، انکیت چوون اور اجیت چنڈیلہ پر لگی پابندی میں نرمی کا مطالبہ نہیں کر رہا مگر پاکستان بینالاقوامی سطح پر عامر کی پابندی پر نرمی کا خواہاں ہے۔ فی الحال محمد عامر پر آئی سی سی کی طرف سے عائد کردہ پابندی کے تحت وہ اس وقت کرکٹ کے حوالے سے کسی نوعیت کی سرگرمی میں حصہ نہیں لے سکتے۔ محمد عامر پر سنہ دو ہزار دس میں اس وقت پاکستان کرکٹ ٹیم کے کپتان سلمان بٹ اور تیز رفتار بالر محمد آصف سے سپاٹ فکسنگ کے الزامات ثابت ہونے کے بعد کرکٹ کھیلنے پر پابندی لگا دی گئی تھی۔ محمد آصف اور سلمان بٹ پر دس دس سال کی پابندی لگا دی گئی تھی جبکہ محمد آصف پر پانچ سال کی پابندی لگائی گئی تھی۔ پاکستان باقی دونوں کرکٹرز کیلئے کسی قسم کی نرمی کا خواہاں نہیں ہے۔