مقبول خبریں
یوم عاشور کے حوالہ سے نگینہ جامع مسجد اولڈہم میں روح پرور،ایمان افروز محفل کا اہتمام
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
میاں جی کی لڑکیاں
پکچرگیلری
Advertisement
پانامہ کیس،عدالت عظمیٰ قانون و آئین کے مطابق فیصلہ کرے :چوہدری الطاف شاہد سدھو
اولڈہم:قیام پاکستان سے لیکراب تک تاریخ میں پہلی دفعہ کسی سربراہ مملکت کوکرپشن اور منی لانڈرنگ کے الزامات میں عدالت عظمیٰ کا سامنا کرنا پڑا ہے،پانامہ کیس میں فریقین کے وکلا کی جانب سے دلائل مکمل ہونے کے بعد عدالت عظمیٰ نے مختصر فیصلہ سنانے کی بجائے تفصیلی دینے کیلئے کچھ وقت مانگ لیا ہے،قائد اعظمؒ نے جس پاکستان کی خواہش کی تھی بد قسمتی سے قیام پاکستان کے معرض وجود میں آنے کے فوراً بعد انکی رحلت ہو گئی اس کے بعد سے لیکر اب تک سرمایہ داروں،جاگیرداروں نے اپنے مفادات کو تحفظ دینے کیلئے ملکی اداروں کواپنے تابع کر کے ملکی وسائل کو لوٹ کر معاشرے کے لوٹ مار کی بنیاد رکھ دی،عدالت عظمیٰ پر بھاری ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ ایک تاریخی مقدمہ ہے تمام پہلوئوں کو مد نظر رکھتے ہوئے قانون و آئین کے مطابق ایک ایسا فیصلہ کریں جس سے ہمارے مادر وطن کے اندر ایک ایسے معاشرے کی بنیاد رکھی جا سکے جو کرپشن سے پاک ہو جہاں میرٹ کا بول بالا ہو اور جلد دھرتی ترقی یافتہ ممالک کی صف میں کھڑی ہو،ان خیالات کا اظہار پاک سر زمین پارٹی برطانیہ کے صدر چوہدری الطاف شاہد سدھو نے میڈیا نمائندگان سے ایک بیٹھک کے دوران کیا،انہوں نے مزید کہا کہ اب وقت آ گیا ہے کہ لوٹ کھسوٹ،اقرا پروری،میرٹ کی پامالی،ذاتی پسند یا نا پسند کے کلچر کو ختم کر کے حق و سچ کا بول بالا ہو،انہوں نے کہا کہ پوری قوم اور بیرون ممالک بسنے والوں کی نظریں سپریم کورٹ پر لگی ہوئی ہیں ہم پر امید ہیں کہ پہلی دفعہ طاقتور کا یوم حساب ہو گا اور پاکستان کے اندر ایک نئی صبح کا سورج جب طلوع ہو گا تو وہ پاکستان کی راہ متعین کرے گا اور آئندہ کوئی بھی کرپشن کرنے کی جرات نہیں کرے گا،عدالت عظمیٰ کو کسی کے دبائو میں آئے بغیر فیصلہ کرنا چاہئے۔خصوصی رپورٹ:فیاض بشیر