مقبول خبریں
ن لیگ برطانیہ و یورپ کا نواز شریف،مریم نواز اور کیپٹن صفدر کی سزائیں معطل ہونے پر اظہار تشکر
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
ہم دھوپ میں بادل کی، درختوں کی طرح ہیں!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
نواز شریف لوورز برطانیہ کا وفاقی وزیر برائے انسانی حقوق کامران مائیکل کے اعزاز میں عشائیہ
لندن :گزشتہ رات نواز شریف لوورز برطانیہ کی طرف سے وفاقی وزیر برائے انسانی حقوق کامران مائیکل کے اعزاز میں عشائیہ کا اہتمام کیا گیا ۔ جس سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر کامران مائیکل نے کہا کہ آج کی اس تقریب میں جتنے بھی لوگ بیٹھے ہیں اور جو دور دراز سے آئے ہیں ہم سب کا تعلق پاکستان سے ہے اور ہم پاکستان سے بے حد پیار کرتے ہیں ۔ جیسا کہ آج ہم نواز شریف لوورز کی بات کر رہے ہیں تو جب ہم محبت کی بات کرتے ہیں جب ہم بھائی چارے ‘ اخوت ‘ روداری کی بات کرتے ہیں تو ان سب خوبیوں سے ہی تو پاکستان بنتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ جب تک ہم پاکستان کی بنیادوں میں محبت ‘ اخوت اور بھائی چارے کو فروغ نہیں دیں گے اس وقت تک یہ بنیادیں مضبوط نہیں ہو سکتیں ۔ کامران مائےکل نے کہا کہ میں سمجھتا ہوں کہ ان بنیادوں کو مضبوط کرنے کےلئے ہم سب کو باہم مل جل کر کام کرنے کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے خدا نے پاکستان کو بہت ہی زرخیز خطہ عطاءکیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے اور ہمارے آباءو اجداد نے مل اس ملک میں محبتوں کو پروان چڑھایا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے کبھی دہشت گردی کا لفظ سنا ہی نہیں تھا ۔ کامران مائیکل نے کہا کہ اس وطن عظیم کے سپوت ہونے کے ناطے ہم ان لوگوں کو جو میلی آنکھ سے ہماری طرف ددکھتے ہیں ان کو خاک میں ملا دینا چاہئے ۔ انہوں نے کہا میں سمجھتا ہوں کہ ہمیں اس وقت دو طرح کے دشمنوں کا سامنا ہے ایک وہ جو سرحد پار سے کارروائےاں کرتے ہیں اور دوسرے وہ دشمن جو ملک میں رہتے ہوئے ملک کی جڑوں کو کھوکھلا کرتے ہیں ۔ یہ وہی لوگ ہیں جو اس ملک کو پھلتا پھولتا نہیں دیکھنا چاہتے اور یہ لوگ اغیار کے ساتھ مل کر اس ملک کی بنیادوں کو کھوکھلا کرنے کی کوششوں میں لگے ہوئے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ میں سمجھتا ہوں کہ ہمیں من حیث القوم متحد ہونا پڑے گا کیونکہ جب قومیں متحد ہوتی ہیں تو پھر دنیا کی کوئی طاقت ان کا کچھ نہیں بگاڑ سکتی ۔ آخر میں انہوں نے ناصر بٹ ‘ ملک ریاض ‘ ڈاکٹر اشرف چوہان ‘ انجم چوہدری و دیگر صاحبان کا شکریہ ادا کےا اور کہا کہ نواز شریف لوورز دنیا بھر میں مقبولیت کے ریکارڈ قائم کرے گی ۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئےصدرنواز شریف لوورز ناصر بٹ نے کہا کہ ملک کی صورتحال کے متعلق محترم کامران مائیکل نے بہت اچھی گفتگو کی ۔ انہوں نے کہا کہ میں کامران مائیکل کا بہت شکر گزار ہوں کہ وہ تشریف لائے ۔ ناصر بٹ نے کہا کہ پاکستان میں حالیہ دہشت گردی کے واقعات میں ملوث عناصر یہ نہیں چاہتے کہ یہ ملک ( پاکستان ) ترقی کی منازل طے کرے ۔ انہوں نے کہا کہ جب سے سی پیک منصوبہ شروع ہوا ہے تب سے دشمن طاقتیں اسی کوشش میں لگے ہوئے ہیں کہ کسی نہ کسی طرح یہ منصوبہ رک جائے لیکن انشاءاللہ یہ منصوبہ رکے گا نہیں کیونکہ تمام پاکستانی ‘ تمام سےاسی جماعتیں اس بات پر متفق ہیں کہ اس ملک کی ترقی کی راہ میں حائل ہونے والی رکاوٹوں کو مل کر دور کریں گے ۔ سےاسی اختلافات اپنی جگہ لےکن جب بات ملک کی آتی ہے تو سب متحد ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ہم ان جانبازوں کو سلام پےش کرتے ہیں جنہوں نے اپنی جانوں پر کھیل کر دو دہشت گردوں کو مار گرایا ۔ انہوں نے کہا کہ چاروں صوبے اس بات پر متفق ہیں کہ ہم نے اپنے دشمن کو کسی قیمت پر نہیں چھوڑنا اور نہ ہی ان کو معافی دینی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے دشمن بھارت کو یہ تکلیف لاحق ہے کہ پاکستان تیزی سے ترقی کی منازل طے کر رہا ہے اور یہ بات بھارت کو بری طرح کھٹک رہی ہے لہٰذا وہ نہیں چاہتا کہ پاکستان اےک ترقی یافتہ ملک بنے اس لئے وہ اوچھے ہتھکنڈے استعمال کر رہا ہے ۔ آخر میں انہوں نے کہا کہ ہم میاں نواز شرےف کو سلام پیش کرتے ہےں کہ انہوں نے پاکستان کی ترقی کا جو بیڑا اٹھایا ہے وہ اس تکمیل تک لے کر جائےں گے ۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین نواز شریف لوورز ملک ریاض نے کہا کہ سب سے پہلے وفاقی وزیر برائے انسانی حقوق کامران مائیکل کا شکریہ ادا کرتا ہوں کہ وہ اس تقریب میں تشریف لائے ۔ انہوں نے کہا کہ کامران مائیکل نے آج ثابت کر دیا کہ وہ ہر اس شخص کے ساتھ ہیں جو نواز شریف کے ساتھ ہے جو قائد اعظم کے پاکستان کے ساتھ ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں حالیہ دہشت گردی کی لہر نے پوری دنیا کو جھنجھوڑ کر رکھ دیا ہے اس خوفناک خون کی ہولی سے نہ صرف پاکستان بلکہ پوری دنیا کا امن تباہ ہو رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ دوسری جانب وزیر اعظم پاکستان اور آرمی چیف کے پیغامات سے جو حوصلہ اور جذبہ پوری قوم کو ملا ہے وہ اپنی مثال آپ ہے ۔ انہوں نے کہا کہ دشمن کا خیال تھا کہ ان خطرناک اقدامات سے پاکستانی ڈر جائےں گے ‘ بکھر جائیں گے لیکن الحمدللہ پوری قوم ‘ مےڈیا ‘ سیاستدان ‘ دانشور ‘ بیورو کریسی ‘ حتی کہ ہر پاکستانی سیسہ پلائی دیوار کی طرح ایک جان ‘ ایک قوم بن کر ایک ساتھ کھڑے ہیں ۔ انہوں نے کہا ملک کے دفاع کے لئے ہمیشہ صف اوّل میں رہتے ہوئے ہمارے فوجی جوان ہمیشہ تیار رہتے ہیں ۔ انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان سپر لیگ ( PSL) کی کامیابی نے ان دشمن عناصر کے منہ پر زور دار طمانچہ مارا ہے جو پاکستان سے کرکٹ کے وجود کو ہی مٹانا چاہتے تھے اور اس کا کریڈٹ نواز شرےف کو جاتا ہے جنہوں نے ایک کامیاب ٹیم کا انتخاب کیا اور آج پاکستان سپر لیگ پوری دنیا میں اپنی پہچان بنا چکی ہے ۔ ملک ریاض نے مزید کہا کہ دہشت گردوں نے پوری کوشش کی تھی کہ پی ایس ایل کا فائنل پاکستان کے شہر لاہور میں نہ ہو لیکن سب نے دیکھ لیا کہ آخری فیصلہ پاکستانی قوم نے کیا اور پی ایس ایل کا فائنل لاہور میں ہی ہو گا ۔ انہوں نے کہا کہ سی پیک کو لے کر دنیا کی بہت سی طاقتوں کے پیٹ میں مروڑ اٹھ رہے ہیں ۔ ملک ریاض نے کہا کہ سی پیک کی کامیابی نہ صرف پاکستان بلکہ پورے خطے کی کامیابی ہے اور اس کی کامیابی کا سہرا پاکستان کے سر جاتا ہے جس کی چند ممالک کو تکلیف ہے ۔ انڈیا اوچھے ہتھکنڈے استعمال کر کے پاکستان کو غیر محفوظ ملک ثابت کرنا چاہتا ہے لیکن انڈیا چاہے جتنا بھی زور لگا لے وہ اپنے مذموم مقاصد میں کامیاب نہیں ہو سکے گا اور انشاءاللہ ذلت بھارت کا مقدر ہو گی اور کامیابی و ترقی پاکستان کے قدم چومے گی ۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئےچیئرمین بورڈ آف ایڈوائزری نواز شریف لوورز ڈاکٹر اشرف چوہان نے کہا کہ مجھے بے حد خوشی ہے کہ میں آج اس تقریب میں شریک ہوں ۔ انہوں نے کہا کہ میں مسلم لیگ ن کی وجہ سے ایم پی اے رہا لیکن عرصہ دراز سے تنظیمی معاملات میں نہیں آیا ۔ ڈاکٹر اشرف چوہان نے کہا کہ مجھے جب پتا چلا کہ نواز شرےف لوورز قیام عمل میں لایا گیا ہے تو نے کہا کہ اس میں میرا شامل ہونا بہت ضروری ہے کیونکہ اس طرح ہم اپنے قائد کو محبت کا نذرانہ پیش کر سکتے ہےں ۔ انہوں نے کہا کہ پارٹی میں جو اختلافات چل رہے تھے ایسے حالات میں ملک ریاض محبت کا پیغام لے کر آئے ہیں جس میں بھی شامل ہوں ۔ انہوں نے کہا کہ ایسے بہت سے لوگ ہیں جن کی عرصہ دراز سے مسلم لیگ ن کے لئے بہت قربانیاں ہیں اور وہ آج یہاں نہیں ہیں انشاءاللہ وہ وقت جلدآئے گا جب وہ بھی ےہاں ہوں گے ۔ انہوں نے کہا کہ مدینہ کو اگر میرا مال ‘ میری جان بھی چاہئے تو وہ حاضر ہے لیکن مدینہ میرا وطن نہیں ہے میرا وطن پاکستان ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پچھلے کئی سالوں سے کروڑوں لوگ سعودی عرب میں کام کر رہے ہیں لیکن ان کو کبھی سعودی عرب و دیگر عرب ممالک کی شہریت نہیں ملی میرا وطن تو یہ ہے یہاں ہم سب کو شہریت ملی ۔ انہوں نے کہا کہ میرے پاس برٹش پاسپورٹ ہے لیکن میرا دل پاکستان ہے اور پاکستان کے دل میں اتنی ہی جگہ کسی مسلمان کے لئے ہے ‘ کرسچن کے لئے ہے ‘ سنی کےلئے ہے ‘ شیعہ کے لئے ہے ۔ ڈاکٹر اشرف چوہان نے کہا کہ جب تک ہم وطن کو صف اوّل پر نہیں رکھیں گے ہم آگے نہیں بڑھ سکتے ۔ تقریب سے دیگر خطاب کرنے والوں میں انجم چوہدری ‘ بیرسٹر سہیل ‘ باؤ جی ‘ راجہ سکندر شامل تھے ۔