مقبول خبریں
عبدالباسط ملک کے والدحاجی محمد بشیر مرحوم کی روح کے ایصال ثواب کیلئے دعائیہ تقریب
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
میاں جی کی لڑکیاں
پکچرگیلری
Advertisement
مقبوضہ کشمیر :بھارتی فوجیوں کے ہاتھوں خاتون شہید،حملے میں 5بھارتی فوجی ہلاک
سرینگر:مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوجیوں نے ریاستی دہشت گردی کی تازہ کارروائی کے دوران ضلع شوپیاں میں خاتون کو شہید کر دیا۔کشمیر میڈیا سروس کے مطابق تاجا بیگم نامی خاتون مولو چتراگام کے علاقہ میں محاصرے اور تلاشی کی کارروائی کے دوران فوجیوں کی اندھا دھند فائرنگ کا نشانہ بنی۔ قبل ازیں اسی علاقے میں ایک حملے میں افسر سمیت پانچ بھارتی فوجی ہلاک اور چھ زخمی ہو گئے ۔بھارتی فوجیوں کی ریاستی دہشت گردی کے خلاف شوپیاں، کولگام اور پلہالن میں زبردست مظاہرے کئے گئے ۔ بھارتی پولیس نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے پیلٹ فائرکیے اور آنسو گیس کے گولے داغے جس سے متعدد مظاہرین زخمی ہو گئے ۔ کشمیر یونیورسٹی سرینگرکے طلباء نے ایک طالب علم کی گمشدگی کیخلاف احتجاج کیا۔ہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن کے ارکان نے بھی متحدہ مزاحمتی قیادت کے جاری کردہ احتجاجی پروگرموں کے سلسلے میں بھارتی جبر واستبدادکیخلاف سرینگر میں مظاہرے کیے ۔ مقبوضہ کشمیر میں کٹھ پتلی انتظامیہ نے لوگوں کوضلع کپواڑہ کے علاقے کنن پوشپورہ میں بھارتی فوجیوں کے ہاتھوں 26برس قبل خواتین کی اجتماعی آبروریزی کے المناک سانحے کے متاثرین کے ساتھ اظہار یکجہتی کرنے سے روکنے کیلئے سخت پابندیاں عائد کردیں۔آزادی پسند تنظیموں نے قابض فوج کے اس گھناؤنے جرم کی مذمت کی ۔ انتظامیہ نے سانحہ کنن پوشپورہ کے 26برس مکمل ہونے کے موقع پر سرینگر میں تقریب منعقد کرنے کی بھی اجازت نہ دی ۔ حریت رہنما سید علی گیلانی ،میر واعظ عمر فاروق ، یاسین ملک اور شبیر احمد شاہ نے کہاکہ کنن پوشپورہ کا سانحہ کشمیر کی تاریخ کا افسوسناک ترین واقعہ ہے ۔ انہوں نے عالمی برادری سے اپیل کی کہ وہ اس واقعے کی بین الاقوامی سطح پر تحقیقات کرائے تاکہ اس میں ملوث اہلکاروں کو قانون کے کٹہرے میں لایا جاسکے ۔