مقبول خبریں
پاکستان میں صاف پانی کی سہولت کو ممکن بنانے کیلئے مختلف منصوبوں پر کام کرونگی:زارہ دین
پیپلزپارٹی کے رہنما ندیم اصغر کائرہ کی پریس کانفرنس ،صحافیوں کے سوالات کے جوابات دیئے
واجد خان ایم ای پی کا آزاد کشمیر سے آئے حریت کانفرنس کے رہنمائوں کے اعزاز میں عشائیہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے زیر اہتمام پہلی کشمیر کلچرل نمائش کا اہتمام
دسمبر بے رحم اتنا نہیں تھا!!!!!!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
مقبوضہ کشمیر :بھارتی فوجیوں کے ہاتھوں خاتون شہید،حملے میں 5بھارتی فوجی ہلاک
سرینگر:مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوجیوں نے ریاستی دہشت گردی کی تازہ کارروائی کے دوران ضلع شوپیاں میں خاتون کو شہید کر دیا۔کشمیر میڈیا سروس کے مطابق تاجا بیگم نامی خاتون مولو چتراگام کے علاقہ میں محاصرے اور تلاشی کی کارروائی کے دوران فوجیوں کی اندھا دھند فائرنگ کا نشانہ بنی۔ قبل ازیں اسی علاقے میں ایک حملے میں افسر سمیت پانچ بھارتی فوجی ہلاک اور چھ زخمی ہو گئے ۔بھارتی فوجیوں کی ریاستی دہشت گردی کے خلاف شوپیاں، کولگام اور پلہالن میں زبردست مظاہرے کئے گئے ۔ بھارتی پولیس نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے پیلٹ فائرکیے اور آنسو گیس کے گولے داغے جس سے متعدد مظاہرین زخمی ہو گئے ۔ کشمیر یونیورسٹی سرینگرکے طلباء نے ایک طالب علم کی گمشدگی کیخلاف احتجاج کیا۔ہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن کے ارکان نے بھی متحدہ مزاحمتی قیادت کے جاری کردہ احتجاجی پروگرموں کے سلسلے میں بھارتی جبر واستبدادکیخلاف سرینگر میں مظاہرے کیے ۔ مقبوضہ کشمیر میں کٹھ پتلی انتظامیہ نے لوگوں کوضلع کپواڑہ کے علاقے کنن پوشپورہ میں بھارتی فوجیوں کے ہاتھوں 26برس قبل خواتین کی اجتماعی آبروریزی کے المناک سانحے کے متاثرین کے ساتھ اظہار یکجہتی کرنے سے روکنے کیلئے سخت پابندیاں عائد کردیں۔آزادی پسند تنظیموں نے قابض فوج کے اس گھناؤنے جرم کی مذمت کی ۔ انتظامیہ نے سانحہ کنن پوشپورہ کے 26برس مکمل ہونے کے موقع پر سرینگر میں تقریب منعقد کرنے کی بھی اجازت نہ دی ۔ حریت رہنما سید علی گیلانی ،میر واعظ عمر فاروق ، یاسین ملک اور شبیر احمد شاہ نے کہاکہ کنن پوشپورہ کا سانحہ کشمیر کی تاریخ کا افسوسناک ترین واقعہ ہے ۔ انہوں نے عالمی برادری سے اپیل کی کہ وہ اس واقعے کی بین الاقوامی سطح پر تحقیقات کرائے تاکہ اس میں ملوث اہلکاروں کو قانون کے کٹہرے میں لایا جاسکے ۔