مقبول خبریں
اولڈہم کے نوجوانوں کی طرف سے روح پرور محفل، پیر ابو احمد مقصود مدنی کی خصوصی شرکت
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
دُنیا بھر میں مقیم کشمیریوں کی طرح برطانیہ میں بھی27 اکتوبر کو یومِ سیاہ منانے کا فیصلہ ..!!
سلاوٴ ... ریاست جموں و کشمیر سے تعلق رکھنے والی تمام سیاسی و مذہبی اورعسکری جماعتوں کا ایک نمائندہ اجلاس ہوا جس میں لبریشن فرنٹ، مسلم کانفرنس، مسلم لیگ ن ، پیپلز پارٹی، جماعت اسلامی این ایس ایف اور دیگر نے شرکت کی ، خاص شرکا میں کونسلر چوہدری راسب حسین، کونسلر چوہدری محمد شریف، کونسلر راجہ امجد خان، صدر کشمیر ایڈوائزری کونسل برطانیہ راجہ محمد ایوب، راجہ محمد اسحٰق خان، راجہ فاروق احمد ، سردار امجد عباسی، حاجی راجہ مصطفٰی خان، لالی گل نواز خان، چوہدری حُکمداد، محمدآزاد جرال،چوہدری محمد افضل، راجہ محمد مہربان خان،راجہ عبدالخالق خان،راجہ نوید منگا خان اور شعیب نازش شامل تھے۔ چندجماعتوں کے نمائندوں نے ذاتی مصروفیت کی بنا پر معذرت کی مگر مکمل تعاون کا یقین دلایا۔ اجلاس میں27 اکتوبر کو دُنیا بھر میں مقیم کشمیریوں کی طرح برطانیہ بھرمیں اس دن کو یومِ سیاہ کے طورپر منانے کافیصلہ کیا اوراس بات کا اعادہ کیا گیاکشمیر کی مکمل آزادی تک اس طرح کے پروگراموں کو جاری رکھا جائے گا۔ نمائندہ اجلاس کے شرکا نے واضح کیاکہ پوری قوم اپنی نظریاتی وابستگیوں کے ساتھ ساتھ ایک نقطہ حقِ خود ارادیت پر مکمل طور پر اتفاق کرتی ہے۔ اجلاس میں شامل کونسلرز نے عزم ظاہرکیاکہ وہ اپنی بساط کے مسئلہ کشمیرکو مزید اجاگر کرنے کیلئے اپنی توانیوں کو بروئے کار لائیں گے۔ تحریک کشمیر یورپ کے صدر محمد غالب نے بھی دنیا بھر کے کشمیری، پاکستانی اور آزادی پسند عوام سے اپیل کی ہے کہ وہ مقبوضہ کشمیر پر بھارت کی ننگی جارحیت اور غاصبانہ قبضہ کے خلاف27اکتوبر کا دن یوم سیاہ کے طور پر منائیں۔ مقبوضہ کشمیر میں بھارت کے ظلم اور بربریت انسانی حقوق کی پامالیوں پر توجہ دلائی جائے، یورپ میں آباد کشمیری کمیونٹی بھارت کے سفارت خانوں کے سامنے احتجاجی مظاہرے کریں دنیا کی توجہ مقبوضہ کشمیر کے حالات پر مرکوز کرائی جائے کہ بھارت نے 27اکتوبر1947ء کو کشمیر میں فوجی دراندازی کرکے دو تہائی حصے پر قبضہ کرلیا۔ انہوں نے کہا کہ بھارت کی سات لاکھ درندہ صفت فوج کی دہشت گردی سے ایک لاکھ کشمیری شہید ہوچکے ہیں، ہزاروں کی تعداد میں گمنام قبروں کی داستانیں دنیا کے سامنے آچکی ہیں اور بھارت کشمیر پر اپنا غاصبانہ قبضہ قائم رکھنے کیلئے ہر طرح کے ظالمانہ حربے اور ہتھکنڈے استعمال کررہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کشمیری 27اکتوبر کو یوم سیاہ منا کر بھارت اور عالمی برادری کو یہ پیغام دیں کہ کشمیری بھارت کے فوجی تسلط کو تسلیم نہیں کرتے کشمیری ہر محاذ پر اپنی جدوجہد جاری رکھیں گے اور بھارت کے کسی بھی مکروفریب میں نہیں آئیں۔