مقبول خبریں
برطانوی حکومت مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے اپنا اثر و رسوخ استعمال کرے:ایم پی جیوڈتھ کمنز
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
مقبوضہ کشمیر:ضلع کولگام میں فورسز کا محاصرہ،6کشمیری شہید،دو بھارتی فوجی ہلاک
سرینگر:مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج نے ریاستی دہشت گردی کی نئی کارروائی میں 6کشمیر ی نوجوانوں کو شہید کردیا جبکہ فائرنگ کے دوران 2بھارتی فوجی بھی مارے گئے ۔بھارت نے شہیدہونیوالوں کو مجاہدین قراردیکر اس بار بھی سوچے سمجھے بغیرالزام پاکستان پر عائدکردیا،وزیرمملکت جتیندرا کاکہناہے کہ کشمیر میں حملوں کواسلام آبادسپانسر کرتاہے ۔تفصیلات کے مطابق بھارتی فوج نے ضلع کولگام کے علاقے فریسال گاؤں میں محاصر ے اورتلاشی کے دوران فائرنگ کرکے 4نوجوان کو شہید کرکے مجاہد قراردیدیا۔ان 4نوجوان کی شناخت مدثر احمد تانتری ،وکیل احمد ٹھوکر،فاروق احمد بھٹ اور محمد یونس لون کے نام سے ہوئی اور یہ چاروں کولگام کے رہائشی تھے ۔اسی دوران بھارتی فوج نے ایک گھر کو دھماکوں سے اڑادیاجہاں سے بعد میں ایک نوجوان کی لاش برآمدہوئی،جس کی شناخت اس مکان کے مالک کے بیٹے کے طور پرکئی گئی ۔ بھارتی پولیس کے ایک افسر نے دعوی ٰ کیا ہے کہ یہ نوجوان مجاہدین تھے جو فوج کے ساتھ ایک جھڑپ میں مارے گئے ، جھڑپ میں دو بھارتی فوجی ہلاک اور 3زخمی ہوگئے ،3مجاہدفرارہوگئے ،ہلاک ہونیوالے بھارتی فوجیوں کی شناخت رگھوبیرسنگھ اور بھاندرویا گوپال سنگھ کے نام سے کئی گئی ہے ۔آئی جی پولیس جاوید مجتبیٰ گیلانی کا کہناہے کہ فائرنگ اس وقت شروع ہوئی جب پولیس اور سپاہیوں نے ضلع کولگام کے علاقے فریسال کے ایک گاؤں کے گھر میں عسکریت پسندوں کی موجودگی کی اطلاع ملنے پر ہفتے کی رات گھیراؤ کیا۔واقعہ کی خبر پھیلی تو سینکڑوں مقامی لوگوں نے جمع ہو کر احتجاج کرنا شروع کر دیا۔بھارتی فوج نے ان لوگوں پر بھی فائرنگ کردی ، پیلٹ گن اور آنسوگیس کا بے دریغ استعما ل کیاگیا ،جس سے ایک نوجوان شہیداور بیسیوں زخمی ہو گئے ۔شہید نوجوان کی شناخت مشتاق ابراہیم کے نام سے کئی گئی ہے جو سرگفواراکا رہائشی تھااوراس کی عمر25سال تھی جبکہ 12 شدید زخمی افراد کو سرینگر منتقل کردیاگیا۔بھارتی فوج کے ترجمان کرنل منیش کاکہناہے کہ مارے جانیوالے 4مجاہدین کے قبضے سے 3رائفلیں اور 2پستول برآمد ہوئے ہیں ،فائرنگ کا تبادلہ 10گھنٹے تک جاری رہا،علاقے میں تلاشی آپریشن ابھی بھی جاری ہے کیونکہ مجاہدین کے 3ساتھی فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے ہیں ،افراد کا تعلق حزب المجاہدین اور لشکر طیبہ سے ہے ۔بھارت کے وزیر مملکت جتیندراسنگھ نے نئی دہلی میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ بھارت میں ہونیوالی دہشت گردی کو اسلام آباد سے سپانسر کیاجاتاہے ،اب یہ ڈھکاچھپا نہیں نہیں ہے کہ جموں کشمیر میں ایسے واقعات میں پاکستان ملوث ہے ،اس کے ثبوت بھی موجودہیں۔ کل جماعتی حریت کانفرنس نے کہا ہے کہ بھارت نے مقبوضہ کشمیر کو مکمل طورپر ایک پولیس سٹیٹ میں تبدیل کر دیا ہے جہاں قانون و انصاف نام کی کوئی چیز موجود نہیں ۔ ترجمان نے کہا کہ مزاحمتی قیادت کے پروگراموں کو ناکام بنانے کیلئے کٹھ پتلی انتظامیہ نے جس مذموم طرز عمل کا مظاہرہ کیا اس سے ایک بار پھر ثابت ہوگیا ہے کہ جموں کشمیر عملاً ایک پولیس سٹیٹ ہے اور بھارت کا جمہوری دعویٰ محض ایک فراڈ اور ڈھکوسلہ ہے ۔