مقبول خبریں
عبدالباسط ملک کے والدحاجی محمد بشیر مرحوم کی روح کے ایصال ثواب کیلئے دعائیہ تقریب
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
میاں جی کی لڑکیاں
پکچرگیلری
Advertisement
چاقو سمیت بکنگھم پیلس داخلےکی کوشش میں گرفتارشخص "مدد کیلئے" ملکہ سے ملاقات کا متمنی تھا
لندن ... ضروری سیکورٹی حصار کو توڑ کر ملکہ برطانیہ کے بکنگھم پیلس میں داخل ہونے کی کوشش کرنے والاے شخص نے کہا ہے کہ وہ ملکہ سے ملاقات کا خواہشمند تھا۔ ملزم ڈیوڈ بیلمرنے ویسٹ منسٹر مجسٹریٹس کورٹ میں چاقو رکھنے اور دراندازی کا اعتراف کرلیا۔ کچن نائف اس کی جیکٹ کی جیب میں پلاسٹک بیگ میں تھا اس کا تعلق ہیرنگی، نارتھ لندن سے ہے۔ اس نے حکام کو بتایا ہے کہ وہ خود کو ملنے والی سرکاری امداد سے خوش نہ تھا اور ملکہ سے مل کراسے حل کرنے کا خواشمند تھا کیونکہ اسکی بات کسی دوسرے کی سمجھ میں نہیں آرہی۔ برطانوی پولیس کے مطابق بکنگھم پیلس کے باہر سے ایک چوالیس سالہ شخص کو چاقو سمیت گرفتار کیا گیا ۔ جس نے محل کے شمالی دروازے سے اندر داخل ہونے کی کوشش کی مگر اسے فوراً وہیں روک لیا گیا۔ حکام کے مطابق ملکہ اس وقت محل میں موجود نہیں تھیں۔ اس شخص کو بغیر اجازت کے ایک زیرحفاظت عمارت میں داخلے اور چاقو رکھنے کے جرم میں گرفتار کیا گیا تھا۔ گزشتہ مہینے ایک شخص کو محل میں چوری کرنے کے شبے، دراندازی اور مجرمانہ توڑ پھوڑ کے الزامات میں گرفتار کیا گیا تھا۔ یہ شخص بکنگھم محل کی باڑ پھلانگ کر اندر داخل ہوا تھا۔ اسکے علاوہ محل میں در اندازی کے کئی مشہور واقعات رہے ہیں جن میں سب سے مشہور مائیک فیگن کا 1982 میں در اندازی کا واقعہ ہے جو ملکہ کی خوابگاہ میں داخل ہو گئے تھے۔ ملکہ کو جاگنے پر پتہ چلا کہ ان کے کمرے میں کوئی موجود ہے اور انہوں نے اطلاعات کے مطابق مائیکل فیگن سے ایک گھنٹے تک گفتگو کی جس کے بعد انہیں گرفتار کر لیا گیا تھا۔