مقبول خبریں
جموں کشمیر نیشنل عوامی پارٹی برطانیہ برانچ کے زیرِ اہتمام فکر مقبول بٹ شہید ورکز یونیٹی کنونشن کا انعقاد
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
ہم دھوپ میں بادل کی، درختوں کی طرح ہیں!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
بحرینی وزیر خارجہ شیخ خالد الخلیفہ اعلی سطح وفد کی ساتھ فروری میں پاکستان آئینگے:جاوید ملک
بحرین : پاکستان سفیر جاوید ملک نے کہا ہے کے فروری کے پہلے ہفتے میں بحرینی وزیر خارجہ شیخ خالد الخلیفہ اعلی سطح حکومتی وفد کے ہمراہ پاکستان کا دورہ کرینگے - شیخ خالد الخلیفہ کے وفد میں بحرینی شاہی خاندان کے افراد اور وزارت خارجہ کے سینئر حکام شامل ہونگے - جاوید ملک کے کہنا تھا بطور سفیر تعیناتی کے بعد انکی کوشش رہی ہے کے پاکستان اور بحرین کے دوطرفہ تعلقات میں ہر ممکن وسعت پیدا کی جائے اور ہمارے سفارتی اقتصادی معاشی اور دفاعی تعلقات میں خاطر خواہ اضافہ ہوا ہے - پاکستانی سفیر جاوید ملک کا کہنا تھا کہاس حوالے سے بحرینی وزیر خارجہ کے پاکستان دورہ نہایت اہمیت کا حامل ہے اور یہ پہلی دفع ہے کے پاکستان اور بحرین کے درمیان وزارتی کمیشن کی سطح پر مربوط اور تفصیلی مذاکرات ہونگے - شیخ خالد بن احمدالخلیفہ بحرینی وزیر خارجہ ہونے کے ساتھ ساتھ بحرینی شاہی خاندان کے اہم رکن بھی ہیں اور وہ وزیر اعظم نواز شریف کو بحرین کے بادشاہ کے خیرسگالی کا پیغام بھی پہنچائیں گے - یاد رہے کے بحرین میں پاکستانی سفیر جاوید ملک چند روز قبل بحرینی وزیر خارجہ سے ملاقات بھی کی تھی جس میں پاک بحرین تعلقات کو نئی بلندیوں پر لیجانے پر اتفاق ہوا تھا - آٹھ رکنی وفد پاکستان وزارت خارجہ میں منعقد ا جانے والی پہلی پاک بحرین مشترکہ وزارتی کمیشن کے پہلے اجلاس میں شریک ہوگا - اجلاس میں دونو ممالک کے سفارتی تعلقات پر تفصیلی بریفینگ ہو گی جس کے بعد دونو حکومتوں کے درمیان متعدد یاداشتیں اور معاہدوں پر دستخط کئے جاینگے