مقبول خبریں
عبدالباسط ملک کے والدحاجی محمد بشیر مرحوم کی روح کے ایصال ثواب کیلئے دعائیہ تقریب
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
میاں جی کی لڑکیاں
پکچرگیلری
Advertisement
بھارت کے یوم جمہوریہ پر11دھماکے،کشمیریوں کا یوم سیاہ،دنیا بھر میں احتجاج،ریلیاں
لاہور/سری نگر:بھارت کے 68 ویں یوم جمہوریہ کے موقع پر مقبوضہ کشمیر، لائن آف کنٹرول کے دونوں اطراف اور دنیا بھر میں موجود کشمیریوں نے یوم سیاہ منایا، ایک طرف بھارت میں فوجی پریڈوں اور عسکری قوت کا مظاہرہ کیا گیا تو دوسری جانب دنیا بھر میں کشمیریوں نے بھارتی مظالم کے خلاف احتجاج کیا،بھارت میں 11بم دھماکے بھی ہوئے ۔تفصیلات کے مطابق بھارت نے بھرپور فوجی طاقت کا مظاہرہ کرتے ہوئے گزشتہ روزاپنا 68 واں یوم جمہوریہ منا یا، مرکزی تقریب کے مہمان خصوصی ابوظہبی کے ولی عہد اور متحدہ عرب امارات کی مسلح افواج کے ڈپٹی سپریم کمانڈر محمد بن زید النہیان تھے ،پریڈ میں یو اے ای کا ایک خصوصی فوجی دستہ بھی شریک ہوا۔ نئی دہلی میں ہونے والی تقریب کے موقع پر سکیورٹی کو یقینی بنانے اور ممکنہ دہشت گردی کی روک تھام کے لیے صرف نئی دہلی میں ہی پچاس ہزار سے زائد پولیس اہلکار تعینات کئے گئے تھے تاہم بھارت کی شمال مشرقی ریاستوں میں 11 ریمورٹ کنٹرول دھماکے ہوئے ۔ پولیس کے مطابق 7دھماکے آسام ریاست اور4منی پور میں ہوئے تاہم اس دوران کوئی جانی نقصا ن یا زخمی نہیں ہوا۔دھماکوں کی آوازیں دور دور تک سنی گئی جس سے لوگوں میں شدید خوف و ہراس پھیل گیا ۔ ریاست آسام کے ضلع چرائڈیو میں 3، ضلع سواساگر میں 2 جبکہ دیگر دو اضلاع میں ایک ایک دھماکہ کیا گیا ۔ ان میں ایک یوم جمہوریہ کی تقریبات والے مقام سے تقریبا 5سو میٹر دور نالے میں نصب کیا گیا تھا جو تقریبات کے دوران پھٹ گیا ۔ ریاست منی پور میں ایک دھماکہ منی پور کالج کے قریب ہوا ۔پولیس کے مطابق یونائیٹڈ لبریشن فرنٹ آف آسام کے ایک دھڑے سمیت دیگر باغی تنظیموں نے یوم جمہوریہ کے موقع پر علاقے میں مکمل بائیکاٹ کی کال دیتے ہوئے لوگوں کو گھروں میں رہنے کی تلقین کی تھی ۔نئی دہلی کے علاوہ جموں و کشمیر اور ممبئی میں بھی سکیورٹی ہائی الرٹ رکھی گئی۔ مقبوضہ کشمیرمیں مکمل ہڑتال اور جگہ جگہ پر سیاہ پرچم لہرائے گئے ۔بھارتی یوم جمہوریہ کے موقع پر وادی فوجی چھانی میں تبدیل کردی گئی ،بھارتی فوج نے گھر گھر چھاپوں کے دوران متعدد کشمیریوں کو گرفتار کرلیا۔حریت رہنماؤں سید علی گیلانی، میر واعظ عمر فاروق اور محمد یاسین ملک کی جانب سے جاری مشترکہ بیان میں عالمی برادری سے مطالبہ کیا گیا کہ وہ کشمیریوں کو انصاف فراہم کرے ۔آزادکشمیر بھر سمیت مظفرآباد میں حریت رہنمائوں کی کال پر یوم سیاہ منایاگیادارلحکومت مظفرآبا د کے 9اضلاع کے علاوہ مظفرآباد میں حزب المجاہدین اور حریت پاسبان سمیت کے زیر اہتمام نیلم پل سے شدید بارش اور سردی میں عظیم عالی شان ریلی نکالی گئی ۔برسلزمیں بھارتی سفارت خانے کے سامنے پرامن احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔لاہور،اسلام آباد،کراچی سمیت پاکستان بھر میں کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کیلئے یوم سیا ہ سے تقاریب اورریلیوں کااہتمام کیاگیا۔