مقبول خبریں
ن لیگ برطانیہ و یورپ کا نواز شریف،مریم نواز اور کیپٹن صفدر کی سزائیں معطل ہونے پر اظہار تشکر
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
ہم دھوپ میں بادل کی، درختوں کی طرح ہیں!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
سرینگر:پیلٹ متاثرین کا احتجاجی دھرنا،بھارتی فوج کا نوجوانوں کیخلاف کریک ڈائون
سرینگر:مقبوضہ کشمیر میں قابض فوج کی طرف سے پیلٹ گن کے وحشیانہ استعمال کیخلاف سرینگرمیں پیلٹ متاثرین نے احتجاجی دھرنادیا اور ’’پیلٹ وکٹمز ایسوسی ایشن‘‘ بنانیکا اعلان کردیا۔متاثرین نے کہا کہ ہماری بینائی ختم ہوگئی ہے ، فوج مہلک ہتھیاروں کااستعمال بند کرے ۔قابض فوج نے سرینگرکے مختلف علاقوں میں نوجوانوں کیخلاف کریک ڈائون کیا ۔بارہمولہ میں گھرگھرتلاشی لی گئی ، نقاب پوش افراد نے ایک عالم دین محمداشرف پرتشدد کیا۔انتظامیہ کی عوام دشمن پالیسیوں کیخلاف سرینگرمیں تاجروں نے بھی احتجاج کیا ۔تفصیلات کے مطابق بھارتی فورسز نے ضلع بارہمولہ کے علاقے فتح گڑھ میں 2016کی احتجاجی تحریک میں شرکت کرنے والے نوجوانوں کے خلاف بڑے پیمانے پر تلاشی کی کاروائی شروع کردی ہے ۔ کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق آپریشن کے دوران متعدد نوجوانوں کو گرفتار کیا گیاہے ۔ وادی کے مختلف علاقوں سے آنے والے پیلٹ متاثرین نے پریس کالونی سرینگر میں احتجاجی دھرنا دیا۔ہاتھوں میں بینرز لئے متاثرین ‘‘ہمارے ساتھ انصاف کرو ،پیلٹ چلانا بند کرو ’’ کے نعرے لگا رہے تھے ۔احتجاج میں شامل محمد الطاف میر نے صحافیوں کو بتایاکہ ہم وہ متاثرین ہیں جن کی آنکھوں کی بینائی چھین لی گئی ہے اوراب ہم ایک دوسرے کی مدد کریں گے اور ایک دوسرے کا سہار ا بنیں گے ۔دریں اثنا کشمیر ٹریڈرز اینڈ مینو فیکچررز فیڈریشن سے وابستہ تاجروں کی ایک بڑی تعداد سرینگر کے علاقے کوکربازار میں جمع ہوئی اور پرامن احتجاجی مظاہرہ کیا۔ احتجاجی تاجروں نے ہاتھوں میں پلے کارڈز اور بینرز اٹھا رکھے تھے جن پر مسئلہ کشمیر کے مستقل حل اور گوڈز اینڈسروسز ٹیکس ختم کرنے کے مطالبات درج تھے ۔تاجروں کو پولیس نے راستے میں ہی روکا اور کئی افرادکو گرفتار کرلیا۔ادھرحریت رہنماؤں شبیر احمدڈار،محمد اقبال میر، امتیاز احمد قریشی اور غلام نبی ڈار نے انسانی حقوق کے کشمیری کارکن محمد احسن اونتو پر بھارتی پولیس کے حملے اور انہیں زخمی کرنے کی شدید مذمت کرتے ہوئے اسے سراسر غنڈہ گردی قراردیا۔