مقبول خبریں
پاکستانی کمیونٹی سنٹر اولڈہم میں بیڈمنٹن ٹورنامنٹ کا انعقاد، برطانیہ بھر سے 20 ٹیموں کی شرکت
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
ہم دھوپ میں بادل کی، درختوں کی طرح ہیں!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
ہم میثاق جمہوریت پر قائم ہیں ، کوئی اسے نہ مانے تو ان کا کیا کر سکتے ہیں:نواز شریف
مظفرآباد:آزادجموں وکشمیر کونسل کے چیئرمین وزیراعظم پاکستان نواز شریف نے کہا ہے کہ ہم نے ملک میں افہام وتفہیم کی سیاست کا آغازکرتے ہوئے دوسری جماعتوں کے مینڈیٹ کا احترام کیا ہے ، ایک دوسرے کو برداشت کرنا ہی جمہوریت ہے ، ہم میثاق جمہوریت پر قائم ہیں تاہم اگر کوئی اسے نہ مانے تو ان کا کیا کر سکتے ہیں، ڈیڑھ اینٹ کی الگ مسجد بنانے اور ’’میں نہ مانوں‘‘ کی پالیسی پر چلنے والوں کا ہمارے پاس کوئی علاج نہیں، یہ لاعلاج مسئلہ ہے ، پاکستان میں ترقی کیلئے جتنی رقم خرچ ہورہی ہے اس کی تاریخ میں مثال نہیں ملتی۔ وہ جمعرات کو آزادکشمیرکونسل کے بجٹ اجلاس سے خطاب کر رہے تھے ۔ اس موقع پرصدر آزاد کشمیرسردار مسعود خان، وزیراعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر، وفاقی وزیرخزانہ سینیٹر اسحاق ڈار، وفاقی وزیر تجارت خرم دستگیر، وفاقی وزیر امور کشمیر و گلگت بلتستان چوہدری برجیس طاہر اوردیگربھی موجود تھے ۔ وزیراعظم نے کہا کہ قوم کو اگرپتہ ہوکہ ان کی حکومت ان کیلئے بھرپورجدوجہدکررہی ہے تو عوام مطمئن ہونگے اور ان کا حکومت پر اعتماد قائم ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے دل سے عوام کی خدمت کی ہے ،آزاد کشمیرکے عوام نے مسلم لیگ(ن) کو مثالی مینڈیٹ دیا ہے ، ایسا مینڈیٹ قسمت سے کسی جماعت کو ملتا ہے ۔ وزیراعظم نے کہا کہ حکومت عوام کے اعتماد پر پورا اترے ، حکومت کے کام کے عوام کو اچھے ثمرات ملنے چاہئیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم قوم کے ہر طبقے کی بلاتفریق خدمت کرتے ہیں۔وزیراعظم نے کہا کہ جمہوریت کا مطلب برداشت کا مادہ رکھنا، مثبت تنقید کا سامنا کرنا ہے ، ہم نے ملک میں افہام وتفہیم کی سیاست کا آغاز کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ میثاق جمہوریت پر دستخط سے جمہوریت کے نئے دور کا آغاز ہوا تھا، ہم تو چارٹرڈ آف ڈیمو کریسی پر پوری طرح عمل کررہے ہیں لیکن اگرکوئی ڈیڑھ اینٹ کی مسجد بنا کر بیٹھ جائے اور میں نہ مانوں کی پالیسی پرعمل پیرا ہو اس کا ہم کیا کرسکتے ہیں، اس کا کوئی علاج ہمارے پاس نہیں ہے ، یہ لاعلاج مسئلہ ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہماری افہام و تفہیم کی سیاست کی مثال بلوچستان ، آزاد کشمیر، خیبرپختونخوا، گلگت بلتستان سمیت ہرجگہ نظرآئے گی، ہم نے دیگر جماعتوں کے مینڈیٹ کا احترام کیا ہے کیونکہ یہی جمہوریت ہے ، معاملہ فہمی سے آگے بڑھنا چاہئے ، ملک اور قومیں اسی طرح چلتی ہیں، اگر برداشت اور معاملہ فہمی نہ ہو تو ایک خاندان بھی نہیں چل سکتا۔ انہوں نے کہا کہ اﷲ تعالیٰ کا شکر ہے کہ ہماری حکومت ترقی کے ایجنڈے پر عملدرآمد کررہی ہے ،وزیراعظم نے کہا کہ آزادکشمیر سی پیک کا حصہ ہے اور آزادکشمیر کی ترقی ہماری ترجیح ہے اور یہاں بجلی پیدا کرنے کی بڑی صلاحیت موجود ہے ،آزادکشمیر کے لوگوں کو بھی سامنے آنا چاہئے اور اس سلسلے میں سرمایہ کاری کرنی چاہئے ، ہم ان کی مدد کریں گے ، 2018 تک ملک سے بجلی کی لوڈ شیڈنگ کا خاتمہ ہو جائیگا۔ وزیراعظم نے کہا کہ سی پیک مثالی ترقی کا منصوبہ ہے ، اس کے تحت کئی منصوبوں پرکام جاری ہے ، سی پیک کے بہترین نتائج برآمد ہونگے ، سی پیک کے تحت ملک بھرمیں سڑکوں اور موٹرویزکا جال بچھایا جارہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ جتنی رقم اس وقت مختلف منصوبوں پرملکی ترقی کیلئے خرچ کی جارہی ہے تاریخ میں اس کی مثال نہیں ملتی ۔ قبل ازیں نوازشریف کی صدارت میں آزادجموں کشمیر کونسل کے بجٹ برائے سال2016-17 کی منظوری دے دی گئی ہے ۔آزادجموں وکشمیر کونسل کا اگلے مالی سال کے لیے 22 ارب 55کروڑ روپے کا بجٹ پیش کیا گیا تھا۔ اجلاس میں میاں نواز شریف نے آزاد جموں و کشمیر کونسل کے ارکان عبدالخالق وصی اور چودھری صدیق سے حلف لے لیا ۔ اجلاس میں مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کے ہاتھوں شہید ہونے والے کشمیری بھائیوں کے درجات کی بلندی کی دعا بھی کی گئی ۔ وزیراعظم نوازشریف کو مظفر آباد میں مختلف ترقیاتی منصوبوں میں پیشرفت سے متعلق بریفنگ دی گئی، وزیراعظم نے وادی نیلم میں بھارتی گولہ باری کا نشانہ بننے والی بس کا معائنہ بھی کیا۔ اس سے پہلے مظفرآبادپہنچنے پر آزادکشمیر کے صدراوروزیراعظم نے نوازشریف کا استقبال کیا۔