مقبول خبریں
اولڈہم کے نوجوانوں کی طرف سے روح پرور محفل، پیر ابو احمد مقصود مدنی کی خصوصی شرکت
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
عدالت یا پارلیمنٹ مقبوضہ کشمیر کی متنازعہ حیثیت کو ختم نہیں کر سکتی: یاسین ملک
سری نگر: بھارتی سپریم کورٹ کی جانب سے مقبوضہ کشمیر کو بھارتی آئین کا پابند کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔ حریت رہنماء یاسین ملک نے عدالتی رولنگ کو مسترد کر دیا۔ ایک پریس ریلیز میں یاسین ملک کا کہنا تھا کہ کوئی بھی عدالت یا پارلیمنٹ مقبوضہ کشمیر کی متنازعہ حیثیت کو ختم نہیں کر سکتی۔ان کا کہنا تھا کہ مقبوضہ کشمیر کا مسئلہ بین الاقوامی طور پر تسلیم شدہ تنازعہ ہے جس کو پہلے بھارتی وزیر اعظم جواہر لال نہرو بھی تسلیم کر چکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ عدالتی فیصلے یا قانون سازی سے مقبوضہ کشمیر بھارت کا حصہ نہیں بن سکتا۔یاد رہے کہ بھارتی سپریم کورٹ نے رولنگ دی تھی کہ مقبوضہ کشمیر بھارتی آئین کی حدود سے باہر نہیں ہے۔