مقبول خبریں
اولڈہم کے نوجوانوں کی طرف سے روح پرور محفل، پیر ابو احمد مقصود مدنی کی خصوصی شرکت
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
مقبوضہ کشمیر:بھارتی فوج کا ہسپتال پر قبضہ، کیمپ قائم،بنکروں کی تعمیر شروع کردی
سرینگر:بھارتی فوج نے مقبوضہ کشمیر میں تعلیمی اداروں اور ہسپتالوں پر جبری قبضہ کرنے کا سلسلہ جاری رکھتے ہوئے ایک اور ہسپتال پر قبضہ کر لیا۔ سرکاری عمارتوں کو فورسز کے قبضہ سے آزاد کرنے کے ریاستی حکومت کے دعوؤں کے دوران کپواڑہ قصبہ سے 3کلو میٹر دورگنڈ گوشی میں ہسپتال کی عمارت میں فوج نے اپنا ڈیرہ جما کر وہا ں فوجی کیمپ قائم کر دیااوربنکروں کی تعمیر شروع کردی ہے ۔ فوج کے اس فیصلے کے خلاف علاقہ بھر کے لوگ سراپا احتجاج ہیں۔ہسپتال عمارت کے متصل ایک سرکاری ہائی سکول بھی قائم ہے اور فوجی کیمپ قائم ہونے سے طلباء و طالبات کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔ چیف میڈیکل آفیسر کپوارہ ڈاکٹر ذاکر حسین نے ہسپتال کی عمارت میں فوجی کیمپ قائم کرنے کی تصدیق کی اور کہا ہے کہ وہ بے بس ہیں۔ سید علی گیلانی ، میرواعظ عمر فاروق اور محمد یاسین ملک پر مشتمل مشترکہ حریت قیادت نے نیااحتجاجی کیلنڈر جاری کیا ہے ۔ جس کے مطابق آج ہڑتال ہوگی اور نماز جمعہ کے بعد مقامی طور پر مقرر کردہ مقامات پر آزادی کے حق میں جلسے اور جلوس ہونگے ۔ کل بھی مکمل ہڑتال ہوگی اور صبح سات سے شام چار بجے تک تحصیل ہیڈکوارٹرز کی طرف پیدل اور موٹر سائیکلوں پرآزادی مارچ ہوں گے ۔ہڑتال میں 5دن اتوار، پیر ، منگل ، بدھ اور جمعرات کاوقفہ ہوگا،البتہ پیر کو آزادی پسند تنظیمیں تحصیل ہیڈکوارٹرز پر 2 سے 4 بجے تک احتجاجی دھرنوں کا اہتمام کریں گی ۔منگل کو خواتین مقامی سطح پر نما ز ظہر سے عصر تک احتجاج کریں گی۔بدھ کو وکلا 2 سے 4 بجے تک عدالتی احاطوں میں احتجاجی دھرنا دیں گے اور احتجاجی مظاہرے ہرروز جاری رہیں گے ۔ بھارتی سپریم کورٹ مقبوضہ کشمیر میں پیلٹ گن کے استعمال پر پابندی کی درخواست کی سماعت 30 جنوری 2017کو کرے گی، چیف جسٹس آف انڈیا کے سربراہی والے ڈویژن بنچ نے بھارتی و ریاستی حکومت کو ہدایت دی کہ وہ پیلٹ کا متبادل تلاش کرنے کیلئے قائم کی گئی مرکزی کمیٹی کی رپورٹ پیش کرے ۔