مقبول خبریں
سیرت النبیؐ کے پیغام کو دنیا بھر میں پہنچانے کے لئے میڈیا کا کردار اہم ہے:پیر ابو احمد
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
حکومت برطانیہ کو بے کار سیاحتی مقام پر خطیر رقم خرچ کرنے پر پارلیمنٹ میں خفت کا سامنا
لندن(خصوصی رپورٹ: عدیل خان) حکومت برطانیہ جو پہلے ہی بریگزٹ کے معاملے پر اپوزیشن کے نشانے پر ہے اسے زیر عتاب لانے کیلئے اپوزیشن کو ایک ایشو اور مل گیا ہے۔ سائوتھ اٹلانٹک میں واقع برطانوی جزیرے پر بنائے جانے والے ایئرپورٹ بارے کہا جارہا ہے کہ اس پر حکومت نے فضول میں دوسوپچسی ملین پائونڈز ضائع کردیئے ہیں۔ اپوزیشن رہنمائوں کا کہنا ہے کہ نامساعد موسم کے باعث اول تو یہاں ایئرپورٹ ٹھیک ہی نہ رہ سکے گا اور اگر کچھ ماہ نکال گیا تو موسمی حالات لینڈنگ کی راہ میں حائل رہینگے ایسی صورتحال میں سوال ہی پیدا نہیں ہوتا کہ کوئی کمرشل فلائٹ آپریٹ کرسکے۔ ہائوس آف کامنز کی پبلک اکائونٹس کمیٹی کا کہنا ہے کہ بین الاقوامی ترقی کے برطانوی ادارے ڈیفڈ نے بھی کوتاہی کی اور بغیر چھان بین کے اتنی رقم کی منظوری دیدی جبکہ ڈیفڈ نے اسکے جواب میں اپنی پوزیشن واضع کرتے ہوئے کہا ہے کہ جب رقم کی منظوری دی گئی تب وہاں کے موسمی اثرات اتنے خوفناک نہیں تھے۔ ادارے کا کہنا ہے کہ اس وقت جمع کروائی گئی سروے رپورٹ میں کہا گیا تھا کہ دوہزار بیالیس میں یہاں ٹورسٹس کی تعداد انتیس ہزار سالانہ ہوجائے گی۔ پبلک اکائونٹس کمیٹی کے چیئرمین میگ ہلیئر نے اس صورتحال پر سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس مقام کے موسمی اثرات تو چالز دارون نے اٹھارہ سو چھتیس میں ہی ظاہر کردیئے تھے کہ یہاں موسم بدلنے والا نہیں۔