مقبول خبریں
ن لیگ برطانیہ و یورپ کا نواز شریف،مریم نواز اور کیپٹن صفدر کی سزائیں معطل ہونے پر اظہار تشکر
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
ہم دھوپ میں بادل کی، درختوں کی طرح ہیں!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
پاکستان کے ہائی کمشنر سےپی بی بی سی کے وفد کی جولین ہیملٹن کی زیرقیادت ملاقات
لندن:پاکستان بریٹین بزنس کونسل (پی بی بی سی) کے وفد نے چیئرمین جولین ہیملٹن کی زیرقیادت برطانیہ میں پاکستان کے ہائی کمشنر سید ابن عباس سے ان کے دفتر میں ملاقات کی۔ چیئرمین پی بی بی سی نے ہائی کمشنر کو دو اہم تجارتی سرگرمیوں کے بارے میں آگاہ کیا جن کا اہتمام پی بی بی سی مستقبل قریب میں کر رہی ہے۔ ایک ’’ڈوئنگ بزنس ان پاکستان‘‘ ہے جو 18 جنوری 2017 کو گلاسکو میں سکاٹش گورنمنٹ اور پاکستان ہائی کمیشن لندن کی مدد سے منعقد ہو گی جبکہ دوسری سرگرمی مارچ 2017 میں سابق برطانوی سیکرٹری خارجہ جیک سٹرا کی زیرقیادت ایک اعلیٰ اختیاراتی تجارتی وفد پاکستان بھیجنے کے بارے میں ہے۔ پی بی بی سی کے وفد نے ہائی کمشنر کو گلاسکو کی تقریب ’’ڈوئنگ بزنس ان پاکستان‘‘ میں اظہار خیال کی دعوت دی۔ ہائی کمشنر نے پی بی بی سی کی اس کاوش میں بھرپور دلچسپی کا اظہار کیا اور ان سرگرمیوں کو کامیاب بنانے میں حکومت پاکستان کے ہر ممکن تعاون کی یقین دہانی کرائی۔ بعد ازاں کامن ویلتھ الائنس آف ینگ انٹریپرینیورز (سی اے وائی ای) ایشیا کا وفد اپنے صدر شعبان خالد کی زیرقیادت ملاقات میں شامل ہو گیا۔ سی اے وائی ای کے وفد نے بھی پی بی بی سی کے مجوزہ تجارتی وفد کے لئے اپنی حمایت کا اظہار کیا۔ ہائی کمشنر نے کہا کہ ینگ انٹریپرینیورز پاکستانی معیشت میں مثبت تبدیلی لانے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔ انہوں نے پاکستان اور برطانیہ کے درمیان بہتر کمرشل تعلقات کے مشترکہ مقصد کے حصول کے لئے مختلف کاروباری پلیٹ فارموں کو جوڑنے کی ضرورت کو اجاگر کیا۔ ہائی کمشنر نے مزید کہا کہ کاروباری برادری کے ساتھ اس طرح کے روابط دونوں ملکوں کے درمیان دوطرفہ تجارت کا حجم بڑھانے میں اہم کردار ادا کریں گے۔ملاقات میں پاکستان ہائی کمیشن کے منسٹر پولیٹیکل زاہد حفیظ چوہدری بھی موجود تھے۔