مقبول خبریں
مئیر کونسلر جاوید اقبال نےرضاکارانہ خدمات پرتنظیم وائی فائی کو تعریفی سرٹیفکیٹ اور شیلڈ سے نوازا
پیپلزپارٹی کے رہنما ندیم اصغر کائرہ کی پریس کانفرنس ،صحافیوں کے سوالات کے جوابات دیئے
واجد خان ایم ای پی کا آزاد کشمیر سے آئے حریت کانفرنس کے رہنمائوں کے اعزاز میں عشائیہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے زیر اہتمام پہلی کشمیر کلچرل نمائش کا اہتمام
دسمبر بے رحم اتنا نہیں تھا!!!!!!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
لیاری میں ہونے والی سازشوں کے ذمہ دار نبیل گبول ہیں : کنونیر فرینڈز آف لیاری
لندن ... فرینڈز آف لیاری کے کنونیر حبیب جان نے لندن میں پریس کانفرنس کے ذریعے لیاری میں ہونے والی سازشوں کا ذمہ دار متحدہ قومی موومنٹ کے رہنما نبیل گبول کو قرار دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ظفر بلوچ کے قتل میں بابا لاڈلہ کا کوئی ہاتھ نہیں نبیل گبول نے ماضی میں سردار عزیر جان بلوچ اور غفار ذکری کو بھی لڑوایا تھا اور آج بھی وہ ایسے ہی سازشیں کرکے لیاری والوں کو لڑانا چاہتے ہیں لیکن وہ کامیاب نہیں ہوں گے۔ حبیب جان نے کہا کہ لیاری والے اردو بولنے والوں کو اپنا دشمن نہیں سمجھتے اور نہ ہی اردو بولنے والے پاکستان کے دشمن ہیں لیکن کچھ عناصر ہیں جو بدامنی اور امن و امان خراب کرکے شہر میں خوف کی فضا قائم کرنا چاہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ میں لندن میں موجود تھا تو میرا نام ارشد پپو کے قتل میں نبیل گبول اور ایم کیو ایم نے اسکی بیوہ پر دباوٴ ڈال کر ایف آئی آر میں درج کروایا اس مقدمے میں میری جے آئی ٹی بننی چاہئے جس طرح نبیل گبول کی ہوئی تھی یہ دہرا معیار ہے انہوں نے کہا کہ میری ایک ہفتے قبل لندن میں ڈاکٹر فاروق ستار سے پریس کانفرنس میں ملاقات ہوئی تھی اور مہمان نوازی کا تقاضا ہے کہ میں آنے والے مہمان کا گرم جوشی سے استقبال کروں ۔اس موقع پر بلوچستان کے وزیراعلیٰ ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ بھی موجود تھے۔ انہوں نے کہا کہ لوگ کہتے ہیں کہ ظفر بلوچ کا قتل لیاری میں باہر کے لوگ اتنی آسانی سے نہیں کرسکتے تو ان کو بتا دینا چاہتا ہوں کہ ظفر بلوچ پر ماضی میں بھی جو حملہ کیا گیا تھا تو وہ اپنے گھر کے قریب موجود تھے۔ جبکہ لیاری میں جو دھماکے ہوئے وہ کس نے کرائے اس کی بھی تحقیقات ہونی چاہئے کیونکہ لیاری میں جو معصوم لوگ مارے گئے وہ بھی پاکستانی اور معصوم شہری تھے۔ انہوں نے کہا کہ نبیل گبول کو ظفر بلوچ کے قتل میں نامزد کیا گیا لیکن افسوس کی بات ہے کہ اس سے تحقیقات بھی نہیں کی گئی اور نہ اس کی گرفتاری عمل میں آئی۔