مقبول خبریں
اولڈہم کے نوجوانوں کی طرف سے روح پرور محفل، پیر ابو احمد مقصود مدنی کی خصوصی شرکت
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
میری گورنر پنجاب تقرری اوور سیز پاکستانیوں کے لئے بریک تھرو ہے : محمد سرور
لندن ...گورنر پنجاب محمد سرور نے کہا ہے اس امر میں کوئی شک نہیں کہ وطن عزیز پاکستان انتہائی مشکل حالات سے دوچار ہے لیکن اس کا مطلب یہ نہیں کہ ہم مایوس ہو کر بیٹھ جائیں اور صبح شام ناامیدی، کرپشن اور بربادیوں کے ہی تزکرے کرتے رہیں۔ برطانوی دارالحکومت کندن میں ورلڈ کانگریس آف اوورسیز پاکستانیز کی جانب سے اپنے اعزاز میں منعقدہ استقبالیہ سے خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ہمیں ہرطرف چھائے اندھیروں میں بھی روشنی تلاش کرنی ہے جو صرف اور صرف مثبت سوچ اور عمل سے ممکن ہے۔ انہوں نے کہا برطانیہ میں پہلا پاکستانی ممبر آف پارلیمنٹ کا اعزاز جہاں میرے لئے باعث فخر تھا وہی میرے اس اعزاز سے یقینا ہر پاکستانی اور ہمارے وطن کا نام بھی روشن ہوا ۔ اب میاں نواز شریف کی مہربانی اور اللہ تعالی کی خصوصی عنایت سے مجھے اپنے مادر وطن کی خدمت کرنے کا جو تاریخی موقع ملا یقینا وہ بھی تمام اوور سیز پاکستانیوں کے لئے ایک ایسا بریک تھرو ہے جس سے بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کے حوصلے بلند ہوئے ۔ انہوں نے کہا کہ مایوسی نے عوام کا مجموعی مائنڈ سیٹ بنا دیا ہے کہ ہم تو ہیں ہی کرپٹ اس لئے ملک کا کچھ نہیں ہو سکتا گورنر پنجاب نے کہا خدارا اس مائنڈ سیٹ کو بدلیں خرابیاں ہر ملک اور قوم میں ہیں انہیں کوسنے کی بجائے دوسروں میں اچھائیاں تلاش کریں ایک مثال دیتے ہوئے انہوں نے کہا پاکستان میں ہی اخوت نامی این جی او کے سالانہ اجلاس میں گیا، اس تنظیم نے مجموعی طور پر غریب پاکستانیوں کو چھوٹے چھوٹے کاروبار کیلئے مبلغ 10ہزار سے لے کر 30 ہزار تک رقمیں بطور قرض، تین لاکھ ستر ہزار افراد کو دیں گویامجموعی طور پر پانچ ارب روپے دیئے۔ انہوں نے نہ صرف قرض کی قسطیں واپس کیں بلکہ اب اپنے چھوٹے کاروبار سے اسی تنظیم کو ڈونیشن بھی دیتے ہیں۔ عام پاکستانی ایماندار ہے۔ وطن کا جذبہ ہے۔ کچھ کرنا چاہتے ہیں۔ صرف وسائل کی کمی ہے۔ پاکستان کا جاگیردار کرپٹ ہے، وڈیرہ کرپٹ ہے، نظام کرپٹ ہے، میڈیا کے اس دور میں ہم بہتری کی جانب جا رہے ہیں۔ گزشتہ عید پر ہم نے گورنر ہاؤس کے دروازے عام آدمی کیلئے کھول دیئے گئے تھے۔ غریب نادار یتیم بچوں کے ساتھ ہم نے عید منائی تھی۔ انہوں نے کہا کہ مجھے یہ دیکھ کر بہت حیرت ہوتی ہے کہ غیروں نے اسلام کے دیئے ہوئے 14 سو برس قبل زریں اصولوں مثلاً رول آف لاء ، ہر خاص و عام کے لئے انصاف ، ویلفیئر نظام ، انسانیت کی قدر کو اپنا کر دنیا میں غلبہ اور نیک نامی حاصل کی جبکہ ہم دنیاوی مصلحتوں کا شکار ہو کر پستی کا شکار بن گئے ۔ تعلیم کے حوالہ سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پاکستان خواندگی کے لحاظ سے عالمی ممالک کی فہرست میں سب سے نیچے ہے ۔ سات ملین پاکستانی بچوں نے سکول کا دروازہ تک نہیں دیکھا ، ہمارے سکولوں کی حالت کھنڈرات کا نمونہ پیش کر رہی ہے ، کہیں یہ سکول چار دیواری سے محروم ہیں تو کہیں پینے کا پانی جیسی بنیادی سہولت کا فقدان ہے ۔ انہوں نے برطانیہ کی تینوں بڑی سیاسی جماعتوں نے پاکستان کے ساتھ بزنس و انوسٹمنٹ کی ہمیشہ حمایت کی جو یقینا برطانیہ میں مقیم پاکستانیوں کا مقامی سیاست میں عملی اور متحرک کردار کا آئینہ دار ہے ، اسی مناسبت سے میں آپ کے علم میں لانا چاہتا ہوں کہ اکتوبر کے آخری ہفتہ میں یورپین پارلیمنٹ کی کمیٹی کے سامنے اہم ووٹ کے لئے پیش ہونے والا بل " جی ایس پی پلس " ہے جس سے پاکستان میں ایک سال کے اندر ایک ملین افراد کو روزگار کے مواقع فراہم ہوں گے جبکہ پاکستان کی کاٹن اور گارمنٹ انڈسٹری کا موجودہ تیرہ بلین کا ٹریڈ بڑھ کر چند برسوں میں چھبیس بلین ہو جائے گا ۔ اس کے لئے جہاں برطانیہ کی تمام سیاسی جماعتوں نے ہمیں اپنی حمایت کا یقین دلایا ہے وہیں دنیا کئے ممالک اور طاقتیں ہمارے خلاف لابنگ میں بھی مصروف ہیں ۔ ضرورت اس بات کی ہے کہ آپ جس شہر میں بھی رہتے ہوں وہاں اپنے ممبر آف یورپیئن پارلیمنٹ سے ملاقات کریں اور اس معاملہ میں انہیں پاکستان کی حمایت پرآمادہ کریں ۔ استقبالیہ تقریب سے لارڈ نزیر احمد، لارڈ قربان حسین، یاسمین قریشی ایم پی، ساجد حسین ایم پی، کیتھ واز ایم پی، انس سرور ایم پی، ورلڈ کانگریس کے صدر ناہید رندھاوا، لیبر مسلم فریندز کے فیض رسول، مسلم لیگ ن برطانیہ کے صدر زبیر گل اور علی اصغر چوہدری نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ آج جس طرح وزیراعظم پاکستان میاں نواز شریف نے چوہدری محمد سرور پر اعتماد کیا۔ گورنر پنجاب بنایا۔ چوہدری سرور اپنی اعلیٰ صلاحیتوں کو بروئے کار لاتے ہوئے پاکستان اور برطانیہ کے درمیان تعلقات کے رشتوں کو اور مضبوط کریں گے۔ تارکین وطن کا اعتماد ان کے ساتھ ہے۔ آخر میں تنظیم کے چئیرمین قمر رضا سید نے مہمان خصوصی اور حاضرین کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا ان کی خواہش ہے کہ محمد سرور وطن عزیز میں کامیابیاں سمیٹ کر بار بار یہاں آئیں اور ہم ہر بار ان کے اعزاز میں ایسی تقریبات کا انعقاد کریں کیونکہ ہمیں ان کی ذات پر مکمل اعتماد ہے کہ وہ پنجاب کے ایک مثالی گورنر ثابت ہونگے۔ تقریب میں لندن کے علاوہ لوٹن، سلائو، برمنگھم اور مانچسٹر سمیت متعدد شہروں سے خواتین و حضرات نے اس تقریب میں شرکت کی جسکی نظامت کے فرائض معروف ٹی وی اینکر عالیہ قیصر نے ادا کئے۔