مقبول خبریں
دی سنٹر آف ویلبینگ ، ٹریننگ اینڈ کلچر کے زیر اہتمام دماغی امراض سے آگاہی بارے ورکشاپ
پارٹی رہنما شعیب صدیقی کو پاکستان تحریک انصاف پنجاب کا سیکریٹری جنرل بننے پر مبارک باد
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت جولائی میں برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز،سیمینارز منعقد کریگی
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
مظلوم کشمیری بھائیوں کیلئے پہلے کی طرح آواز بلند کرتے رہیں گے:مئیر کونسلر طاہر محمود ملک
اوورسیز پاکستانیز ویلفیئر کونسل کا وسیم اختر چوہدری اور ملک ندیم عباس کے اعزاز میں استقبالیہ
مسئلہ کشمیر کو برطانیہ و یورپ میں اجاگر کرنے پر تحریکی عہدیداروں کا اہم کردار ہے: امجد بشیر
جس لڑکی نے خواب دکھائے وہ لڑکی نابینا تھی!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
ہزاروں اسلامی انتہاپسندآج بھی برطانیہ پر حملے کو اپنا جائز ہدف سمجھتے ہیں: ڈی جی ایم آئی فائیو
لندن حساس برطانوی ادارے ایم آئی فایئو کے ڈائریکٹر جنرل انڈریو پارکر کا کہنا ہے کہ مسلم انتہا پسند آج بھی برطانیہ پر حملے کو جائز اور عین اسلامی سمجھتے ہیں۔ ڈی جی ایم آئی فایئو کا عہدہ سنبھالنے کے پہلی عوامی تقریر میں ان کا کہنا تھا کہ ملک میں موجود ہزاروں اسلامی انتہاپسند برطانوی عوام کو اپنا جائز ہدف سمجھتے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ القاعدہ اور پاکستان اور یمن میں اس سے وابستہ افراد برطانیہ کے لیے فوری اور براہِ راست خطرہ ہیں۔ برطانوی تھنک ٹینک "روسی" کے زیرانتطام وائٹ ہال میں منعقدہ اہم تقریب میں ان کا کہنا تھا کہ سکیورٹی اداروں کو بھی ان مواصلاتی ذرائع تک رسائی ہونی چاہیے جو کہ اب دہشتگرد استعمال کرتے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ برطانیہ کو درپیش خطرات بہت متنوع ہوتے جا رہے ہیں تاہم یہ معاملہ برقرار ہے کہ یہاں کئی ہزار اسلامی انتہاپسند ہیں جو برطانوی عوام کو اپنا جائز ہدف سمجھتے ہیں۔ اینڈریو پارکر نے کہا کہ کسی فرد کو جاننے کا مطلب یہ نہیں ہوتا کہ آپ اس کے بارے میں سب کچھ جانتے ہیں یاہمارے ریڈار پر ہونے کا مطلب یہ نہیں کہ لازماً ہم باریک بینی سے آپ پر نظر رکھے ہوئے ہیں۔ ایم آئی فائیو کے سربراہ نے شام میں جاری تنازع کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ادارہ شام میں جاری لڑائی میں شرکت کے لیے برطانیہ سے لوگوں کی روانگی کے رحجان پر فکرمند ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ مغربی حکومتوں کے لیے باعثِ تشویش ہے۔ برطانیہ میں مقیم جہادی ایک دن شامی محاذِ جنگ سے واپس آئیں گے اور پھر اپنی صلاحیتوں کا استعمال یہاں کے عوام پر کریں گے۔ انہوں نے خبردار کیا کہ دنیا میں دہشتگردوں کو اب بہترین مواصلاتی سہولیات میسر ہیں جن میں ’ای میل، انٹرنیٹ ٹیلیفون، ان گیم کمیونیکیشن، سوشل نیٹ ورکنگ، گمنام چیٹ رومز اور موبائل ایپس جیسی سہولیات میسر ہیں۔ ایم آئی فائیو اور جی سی ایچ کیو کے لیے انتہائی اہم ہے کہ وہ ان تمام ذرائع سے معلومات کے حصول کی صلاحیت حاصل کرے۔