مقبول خبریں
مئیر کونسلر جاوید اقبال کی طرف سے نسیم اشرف اور قاری محمد بلال کو تعریفی سرٹیفکیٹ سے نوازا گیا
پیپلزپارٹی کے رہنما ندیم اصغر کائرہ کی پریس کانفرنس ،صحافیوں کے سوالات کے جوابات دیئے
واجد خان ایم ای پی کا آزاد کشمیر سے آئے حریت کانفرنس کے رہنمائوں کے اعزاز میں عشائیہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے زیر اہتمام پہلی کشمیر کلچرل نمائش کا اہتمام
دسمبر بے رحم اتنا نہیں تھا!!!!!!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
مقبوضہ کشمیر : بھارتی فورسز کی ریاستی دہشتگردی جاری، مزید3نوجوان شہیدکردئیے
سرینگر:مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فورسزنے ریاستی دہشتگردی جاری رکھتے ہوئے مزید3نوجوان شہیدکردئیے ۔کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق بھارتی فوجیوں نے ضلع بانڈی پورہ کے علاقہ نائیدکھائی میں آبادی کامحاصرہ کرلیااورگھرگھرتلاشی لی جبکہ اس دوران2نوجوان کوفائرنگ سے شہیدکردیا،قبل ازیں اسی علاقے میں ایک حملہ کے دوران بھارتی فوج کا ایک اہلکارماراگیا تھا۔ادھربھارتی پولیس کے ایک سینئرافسر نے دعویٰ کیاکہ فوجی کارروائی میں ہلاک ہونیوالے دونوں نوجوان عسکریت پسندتھے ۔ادھرضلع بارہ مولامیں بھی جعلی مقابلہ کے دوران ایک نوجوان شہیدکردیاگیا۔دریں اثنا نوجوانوں کی شہادت کی خبر پھیلتے ہی سرینگر، بڈگام، گاندربل،سوپور، پلہالن، بارہمولہ ،بانڈی پورہ، کپواڑہ، اسلام آباد، پلوامہ، شوپیاں، کولگام اور دیگر علاقوں میں ہزاروں افرادسڑکوں پر نکل آئے اوربھارتی مظالم کیخلاف زبردست احتجاجی مظاہرے کئے جبکہ پاکستانی جھنڈے بھی لہرائے گئے ،اس دوران لوگوں نے پاکستان اورآزادی کے حق میں جبکہ بھارت کیخلاف فلک شگاف نعرے لگائے ،قابض فورسزنے مظاہرین کومنتشرکرنے کیلئے طاقت کاوحشیانہ استعمال کیاجس سے درجنوں افراد زخمی ہوگئے ۔ دوسری جانب حریت رہنماؤں کی کال پر سرینگر سمیت مقبوضہ وادی کے مختلف شہروں میں مکمل ہڑتال رہی،ریاست بھرمیں کاروباری مراکز،سرکاری دفاتر،تعلیمی ادارے اورپٹرول پمپ بندہیں جبکہ سڑکوں پر قابض فوج اور پولیس کے اہلکار گشت کرتے نظرآئے ،فورسزنے نمازِجمعہ کی ادائیگی روکنے کیلئے جامع مسجدسرینگرکوجانیوالے تمام راستے خاردارتارلگا کرسیل کردئیے ،نیزحریت قیادت نے ہڑتال کی کال میں یکم دسمبرتک توسیع کردی۔خیال رہے کہ حریت پسندلیڈربرہان وانی کی شہادت کے بعدمقبوضہ وادی میں اٹھنے والی احتجاجی لہرکو139روزگزرگئے ،اس دوران بھارتی فورسزکے ہاتھوں114نہتے کشمیری شہیدجبکہ15ہزار سے زائدزخمی ہوچکے ہیں۔