مقبول خبریں
عبدالباسط ملک کے والدحاجی محمد بشیر مرحوم کی روح کے ایصال ثواب کیلئے دعائیہ تقریب
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
میاں جی کی لڑکیاں
پکچرگیلری
Advertisement
مقبوضہ کشمیر : بھارتی فورسز کی ریاستی دہشتگردی جاری، مزید3نوجوان شہیدکردئیے
سرینگر:مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فورسزنے ریاستی دہشتگردی جاری رکھتے ہوئے مزید3نوجوان شہیدکردئیے ۔کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق بھارتی فوجیوں نے ضلع بانڈی پورہ کے علاقہ نائیدکھائی میں آبادی کامحاصرہ کرلیااورگھرگھرتلاشی لی جبکہ اس دوران2نوجوان کوفائرنگ سے شہیدکردیا،قبل ازیں اسی علاقے میں ایک حملہ کے دوران بھارتی فوج کا ایک اہلکارماراگیا تھا۔ادھربھارتی پولیس کے ایک سینئرافسر نے دعویٰ کیاکہ فوجی کارروائی میں ہلاک ہونیوالے دونوں نوجوان عسکریت پسندتھے ۔ادھرضلع بارہ مولامیں بھی جعلی مقابلہ کے دوران ایک نوجوان شہیدکردیاگیا۔دریں اثنا نوجوانوں کی شہادت کی خبر پھیلتے ہی سرینگر، بڈگام، گاندربل،سوپور، پلہالن، بارہمولہ ،بانڈی پورہ، کپواڑہ، اسلام آباد، پلوامہ، شوپیاں، کولگام اور دیگر علاقوں میں ہزاروں افرادسڑکوں پر نکل آئے اوربھارتی مظالم کیخلاف زبردست احتجاجی مظاہرے کئے جبکہ پاکستانی جھنڈے بھی لہرائے گئے ،اس دوران لوگوں نے پاکستان اورآزادی کے حق میں جبکہ بھارت کیخلاف فلک شگاف نعرے لگائے ،قابض فورسزنے مظاہرین کومنتشرکرنے کیلئے طاقت کاوحشیانہ استعمال کیاجس سے درجنوں افراد زخمی ہوگئے ۔ دوسری جانب حریت رہنماؤں کی کال پر سرینگر سمیت مقبوضہ وادی کے مختلف شہروں میں مکمل ہڑتال رہی،ریاست بھرمیں کاروباری مراکز،سرکاری دفاتر،تعلیمی ادارے اورپٹرول پمپ بندہیں جبکہ سڑکوں پر قابض فوج اور پولیس کے اہلکار گشت کرتے نظرآئے ،فورسزنے نمازِجمعہ کی ادائیگی روکنے کیلئے جامع مسجدسرینگرکوجانیوالے تمام راستے خاردارتارلگا کرسیل کردئیے ،نیزحریت قیادت نے ہڑتال کی کال میں یکم دسمبرتک توسیع کردی۔خیال رہے کہ حریت پسندلیڈربرہان وانی کی شہادت کے بعدمقبوضہ وادی میں اٹھنے والی احتجاجی لہرکو139روزگزرگئے ،اس دوران بھارتی فورسزکے ہاتھوں114نہتے کشمیری شہیدجبکہ15ہزار سے زائدزخمی ہوچکے ہیں۔