مقبول خبریں
برطانوی حکومت مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے اپنا اثر و رسوخ استعمال کرے:ایم پی جیوڈتھ کمنز
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
پولنگ کا پول کھل گیا، کراچی حلقہ این اے 256 میں77 ہزار 642 ووٹ جعلی قرار
کراچی ... تحریک انصاف کے امیدوار کی جانب سے انتخابات میں ڈالے گئے ووٹوں کی سکروٹنی کے عمل نے ایسے ہوش ربا انکشافات کیے ہیں کہ لوگ سوچنے پر مجبور ہوگئے ہیں آیا ماضی میں کبھی فری اینڈ فئیر الیکشن ہوئے بھی کہ سب ڈھکوسلہ تھا۔ نادرا کی نشان انگوٹھا انکوائری میں حلقہ این اے256 سے یہ حقیقت سامنے آئی ہے کہ 67پولنگ اسٹیشن میں ڈالے گئے84ہزار448 ووٹوں میں سے 77 ہزار 642 ووٹوں کو جعلی قراردے دیا گیاہے۔این اے 256 سے متحدہ قومی موومنٹ کے امیدوار اقبال محمد علی کی کامیابی کو تحریک انصاف کے امیدوار زبیر خان نے چیلنج کیا تھا ، جس پر الیکشن ٹریبونل نے نادرا کو انگوٹھوں کے نشان کی تصدیق کرنے کا کہا تھا۔ انگوٹھوں کی تصدیق کیلئے زبیر خان نے نو لاکھ روپے جمع کرائے تھے۔ نادرا کی جانب سے آج رپورٹ الیکشن ٹریبونل میں جمع کرائی ،جس کے مطابق 67 پولنگ اسٹیشنز میں 84 ہزار چارسو 48 ووٹ ڈالے گئے ،نادرا کے ریکارڈ کے مطابق صرف چھ ہزار 806 ووٹوں کی تصدیق ہوسکی ،جبکہ 77 ہزار 642 ووٹ جعلی قرار دیئے گئے ،رپورٹ کے مطابق پانچ ہزار 893 ووٹ ایسے تھے جو ووٹرز نے ایک سے زائد ڈالے۔انتخابات میں ایم کیوایم کے امیدوار اقبال محمد علی نے ایک لاکھ 51 ہزار 788 ووٹ حاصل کیے تھے جبکہ تحریک انصاف کے امیدوار زبیرخان نے 69 ہزار 72 ووٹ حاصل کیے تھے۔