مقبول خبریں
راچڈیل کیسلمئیرسنٹر میں کمیونٹی کو صحت مند رہنے،حفاظتی تدابیر بارے آگاہی ورکشاپ کا انعقاد
یورپی پارلیمنٹ میں قائم ’’فرینڈز آف کشمیر گروپ‘‘ کی تنظیم سازی کردی گئی
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت جولائی میں برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز،سیمینارز منعقد کریگی
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
مظلوم کشمیری بھائیوں کیلئے پہلے کی طرح آواز بلند کرتے رہیں گے:مئیر کونسلر طاہر محمود ملک
اوورسیز پاکستانیز ویلفیئر کونسل کا وسیم اختر چوہدری اور ملک ندیم عباس کے اعزاز میں استقبالیہ
مسئلہ کشمیر کو برطانیہ و یورپ میں اجاگر کرنے پر تحریکی عہدیداروں کا اہم کردار ہے: امجد بشیر
ہم نے سچ کو دیکھا ہے جھوٹ کے جھروکوں سے!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
لوٹن کی سیاسی، سماجی و دینی شخصیات پرمشتمل وفد کا الحرا ایجوکیشنل سنٹر کا دورہ ..!!
لوٹن...لوٹن کی سیاسی، سماجی و دینی شخصیات پر مشتمل ایک وفد نے الحرا ایجوکیشنل سنٹر کا دورہ کیا اور انتظامیہ سے اظہار یکجہتی کیا۔ وفد میں علامہ قاضی عبدالعزیز چشتی لوٹن بارو کونسل کے کونسلرز کونسلر ریاض بٹ، کونسلر راجہ سلیم، کونسلر راجہ وحید اکبر، کونسلر محمود ملک، کونسلر ایوب چوہدری، کونسلر طاہر ملک، کونسلر خدیجہ ملک شامل تھے۔ الحرا ایڈوکیشنل سینٹر کو گزشتہ جمعرات کی رات کو پیٹرول سے جلانے کی کوشش کی گئی تھی دورہ کے دوران سینٹر کے منتظم اعلیٰ اور امام مولانا مسعود ہزاروی نے وفد کو بتایا اور فوٹیج بھی دکھائی کہ کس طرح ایک آدمی ہاتھ میں پیٹرول کا پلاسٹک کین اور دوسری اشیاء لے کر آیا اور سینٹر کے باہر بڑے ڈسٹ بین کے اوپر چڑھ کر کھرکی سے اندر پیٹرول چھڑک کر آگ لگانا چاہتا تھا آواز سن کر سینٹر کے اندر ایک نوجوان جو مسجد کی صفائی کررہا تھا نے اندر کی لائٹیں جلائی لائٹیں جلنے پر وہ آدمی وہاں سے چلا گیا۔مولانا مسعود ہزاروی نے وفد کو بتایا کہ انہوں نے وڈیو فوٹیج اور سٹیٹمنٹ پولیس کو دے دی پولیس کے فرانزک ایکسپرٹ جائزہ لے رہے ہیں اور پتہ لگانے کی کوشش کررہے کہ یہ آدمی کون ہے۔ اس موقع پر وفد کے اراکین کے اس واقعہ کی مذمت کی اور کہا ہمیں یقینا ہے کہ پولیس بہت جلد اس سارے واقع کی تحقیقات کرکے معاملے کی تہہ تک پہنچ جائے گی اور ذمہ دار شخص کو گرفتار کرلیا جائے گا۔اس موقع پر قاری علی اصغر، ساجد ملک اور دوسرے احباب بھی موجود تھے۔