مقبول خبریں
برطانوی حکومت مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے اپنا اثر و رسوخ استعمال کرے:ایم پی جیوڈتھ کمنز
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
سکاٹش برطانیہ سے علیحدگی کا حق رکھتے ہیں تو کشمیریوں کا حق کیوں تسلیم نہیں کیا جاتا: ملک نواز
بولٹن ...سابق سینئر وزیر آزادکشمیر ملک محمد نواز خان نے کہا ہے کہ سکاٹ لینڈ آئینی اور قانونی طور پر برطانیہ کا حصہ ہے اور اگر سکاٹش عوام برطانیہ سے علیحدگی کا مطالبہ کرتے ہوئے آزادی مانگ سکتے ہیں تو پھر اقوام متحدہ کے چارٹر میں تسلیم شدہ کشمیریوں کے حق حق خودارادیت کو کیوں مسلسل دبایا جارہا ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے بولٹن میں اپنے اعزاز میں منعقدہ ایک تقریب میں کیا۔انہوں نے کہا آزادی کشمیری قوم کابنیادی و پیدائشی حق ہے۔ 66 سال گزر گئے اور دنیا اکیسویں صدی میں داخل ہوکر ایک آزاد اور مہذب معاشرے کا روپ دھار چکی ہے۔ لیکن کشمیری قوم کو تاحال اس نعمت سے محروم رکھ کر انسانی حقوق اور اقوام متحدہ کے تسلیم کردہ حق، حق خودارادیت کے معاہدہ کی کھلم کھلا خلاف ورزی کی جارہی ہے۔ مسئلہ کشمیر حقیقی طور پر سلطنت برطانیہ کا پیدا کردہ ہے اور حکومت برطانیہ تنازعہ کشمیر کوحل کرانے میں سنجیدگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے کلیدی کردار ادا کرے۔ تقریب سے صاحب صدر حاجی محمد انور، صدر برطانیہ محمد بشیر رٹوی، چیئرمین یوتھ بورڈ راجہ ریاض بڑاہلوی، سردار فردوس بیگ، راجہ ناصر، سردار سہراب، لالہ علی اصغر، شبیر ملک، مرکزی سیکرٹری مالیات چوہدری ذوالفقار اور راجہ ذوالقرنین نے بھی خطاب کیا جبکہ نظامت محمد سبحان نے کی۔ اس موقع پر راجہ عباس، طلعت جمیل، خالد زرگر، راجہ فرید، راجہ احسان، راجہ عارف کیانی، امجد حسین مغل، راجہ سرفراز اور چوہدری حنیف سمیت کثیر تعداد میں لوگوں نے شرکت کی۔