مقبول خبریں
مکس مارشل آرٹ کونسل اور چیریٹی آرگنائزیشن کے زیر اہتمام تقریب کا انعقاد
بریگزیٹ بحران :کنزرویٹو پارٹی کی تین خواتین ممبر کی آزاد گروپ میں شمولیت
مسئلہ کشمیر کو پر امن طریقے سے حل کیا جائے: برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ کا مطالبہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
میئرآف لوٹن (برطانیہ) نے شاہد حسین سید کو کمیونٹی سروسز پر شیلڈ پیش کی
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
راجہ نجا بت حسین کی صدر آزاد کشمیر سردار مسعود اور وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر سے ملاقات
میں روشنی سے اندھیرے میں بات کرتا ہوں!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
معروف کشمیری راہنما مولانامحمد یعقوب چشتی کو ستارہ پاکستان عطا کر دیا گیا
لندن (کشمیر لنک نیوز) ممتاز کشمیری رہنما مولانا محمد یعقوب چشتی کو پاکستان ہائی کمیشن میں منعقدہ ایک پْروقار تقریب میں صدر پاکستان کی جانب سے ستارہ پاکستان عطا کیا گیا۔ انہیں یہ ستارہ پاکستان پاکستانی ہائی کمشنر واجد شمس الحسن نے پیش کیا۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ہائی کمشنر واجد شمس الحسن نے کہا کہ مولانا محمد یعقوب چشتی ایک طویل عرصہ سے برطانیہ میں مسئلہ کشمیر کو اجاگر کرنے کی کوششیں کر رہے ہیں اور انہوں نے اس ملک میں مسئلہ کشمیر کو زندہ رکھا ہوا ہے۔انہوں نے کہا کہ وہ خود20 برس سے انہیں کشمیر کے بارے میں پروگرام منعقد کراتے اور کشمیریوں کے حق میں ہونے والے مظاہروں میں شرکت کرتا ہوا دیکھ رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مولانا محمد یعقوب چشتی کو ان کی طویل خدمات کا اعتراف کرتے ہوئے حکومت نے ستارہ پاکستان سے نوازا ہے۔ حکومت یہ سمجھتی ہے کہ اس طرح کے بزرگوں کی خدمات کا اعتراف کیا جانا چاہئے۔انہوں نے کہا کہ ڈاکٹر وحید احمد کو بھی پاکستان کے بارے میں ان کے گرانقدر تحقیقی کام کی وجہ سے ستارہ امتیاز دیا گیا ہے۔ تقریب کی نظامت ڈپٹی ہائی کمشنر سید ذوالفقار علی گردیزی نے کی جبکہ اس میں اہم شخصیات نے شرکت کی۔ بعدازاں مولانا محمد یعقوب چشتی نے گفتگو کرتے ہوئے اپنی خدمات کے اعتراف میں ستارہ پاکستان دیئے جانے پر حکومت پاکستان کا شکریہ اداکیا۔ انہوں نے کہا کہ انہوں نے ہمیشہ کشمیر کا الحاق پاکستان کے ساتھ کرنے کی جدوجہد کی ہے اور وہ چاہتے ہیں کہ بھارت اپنی افواج کو کشمیر سے باہر نکال لے۔ انہوں نے کہا کہ وہ مرتے دم تک کشمیر کی آزادی اور اس کے پاکستان کے ساتھ الحاق کی جدوجہد جاری رکھیں گے۔ انہوں نے پاکستان میں بم دھماکوں اور خودکش حملوں کی موجودہ لہر پر تشویش کا اظہار کیا اور کہا کہ حکومت پاکستان مصالحت کا عمل شروع کرے۔