مقبول خبریں
مئیر کونسلر جاوید اقبال کی طرف سے نسیم اشرف اور قاری محمد بلال کو تعریفی سرٹیفکیٹ سے نوازا گیا
پیپلزپارٹی کے رہنما ندیم اصغر کائرہ کی پریس کانفرنس ،صحافیوں کے سوالات کے جوابات دیئے
واجد خان ایم ای پی کا آزاد کشمیر سے آئے حریت کانفرنس کے رہنمائوں کے اعزاز میں عشائیہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے زیر اہتمام پہلی کشمیر کلچرل نمائش کا اہتمام
دسمبر بے رحم اتنا نہیں تھا!!!!!!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
امریکی دارالحکومت میں وائٹ ہائوس کے سامنے فائرنگ ایک خاتون جاں بحق، بچہ محفوظ
واشنگٹن ...کسی بھی ملک کا دارالحکومت دیگر شہروں کی نسبت زیادہ حساس علاقہ ہوتا ہے دنیا بھر میں ایسی مثالیں موجود ہیں کہ وہاں کی پارلیمنٹ کی سیکورٹی کےلئے خطرہ بننے والوں کو سیدھا گولی کا نشانہ بننا پڑتا ہے، ایسا ہی امریکی دارالحکومت واشنگٹن میں ہوا جہاں سرکاری ادارے وائٹ ہائوس کے حساس دفاتر موجود ہیں۔ امریکہ کے دارالحکومت واشنگٹن پولیس حکام کا کہنا ہے کہ وائٹ ہاؤس کے سامنے ایک خاتون نے سکیورٹی باڑ کوتوڑا، اور پھر پولیس کے اشارے کے باوجود نہ رکنے پر فائرنگ کی گئی۔جس پروہ خاتون گولی لگنے پر ہلاک ہو گئی۔ پولیس اس واقعے کو “کار چیز“ یعنی کار کا تعاقب کا نام دے رہے ہیں۔ یہ واقعہ وائٹ ہائوس کے عین سامنے پیش آیا۔ یہ فائرنگ ایسے وقت ہوئی ہے جب حکومت اور حزب اختلاف کے درمیان بجٹ پر اتفاق نہ ہونے کے باعث شٹ ڈاؤن جاری ہے۔ پولیس کے مطابق یہ واقعہ اس وقت شروع ہوا جب ایک خاتون نے اپنی گاڑی وائٹ ہاؤس کے قریب سکیورٹی گیٹ سے ٹکرائی اور پھر کانگریس کی عمارت کی جانب روانہ ہو گئیں۔ واشنگٹن پولیس کی سربراہ، کیتھی لینئر نےمیڈیا کو بتایا کہ پولیس نے واقع میں ملوث خاتون کی گاڑی پر گولی چلائی جس سے وہ ہلاک ہوئیں۔ لینئر نے بتایا کہ اس واقعے میں، کم از کم دو مقامات پر گولیاں چلیں۔ کیپیٹل پولیس کے سربراہ، کِم دائین نے بتایا کہ معلوم ہوتا ہے کہ اس واقع کا دہشت گردی سے کوئی تعلق نہیں لگتا۔ اُنھوں نے کہا کہ زخمی ہونے والے پولیس افسر کی صحت بحال ہو رہی ہے جب کہ ایک اہل کار نے تعاقب کی جانے والی کار میں سے ایک سالہ بچے کو بحفاظت نکال لیا ہے۔ ہلاک ہونے والی خاتون کو مریم کیری کے نام سے شناخت کیا گیا ہے جو ایک سال پہلے اپنی بچی کی پیدائش کے بعد ذہنی دبائو کا شکار تھی۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق اسے بے جا طور پر مار دیا گیا حالانکہ وہ کار روک کر نہتی باہر نکل آئی تھی۔