مقبول خبریں
جموں کشمیر نیشنل عوامی پارٹی برطانیہ برانچ کے زیرِ اہتمام فکر مقبول بٹ شہید ورکز یونیٹی کنونشن کا انعقاد
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
ہم دھوپ میں بادل کی، درختوں کی طرح ہیں!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
پروڈکٹ پرحلال یا کوشرلیبل لگا تو وہ خودبخودسنگل آوٴٹ ہوجائے گی: سجاد کریم ایم ای پی
مانچسٹر ... نارتھ ویسٹ سے ٹوری پارٹی کے ممبر یورپی پالیمنٹ سجاد کریم نے حلال پروڈکٹس کے لئے فوڈ لیبلنگ کے سلسلے میں یورپی قوانین مزید سخت کرنے کی ڈینش ایم ای پی کی مہم کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایک بار پھر اس ایشو نے سر اٹھایا ہے۔ اگر ہم ایک پروڈکٹ پر ”حلال“ یا ”کوشر“ کا لیبل لگائیں گے تو وہ خودبخود سنگل آوٴٹ ہوجائے گی اور اس کی فروخت کم ہوجائے گی قیمتیں بڑھ جائیں گی اور دستیابی تباہ ہوگی۔ سجاد کریم اس پالیسی کے خلاف طویل عرصے سے کمپین چلارہے ہیں ان کا کہنا ہے کہ اس نوعیت کے فیصلے ملکی سطح پر کئے جانے بہتر ہیں نہ کہ یورپی یونین کی سطح پر۔ انہوں نے مزید کہا کہ یہ منصوبے اس کے بعد ویسے ہی امتیازی ہیں کہ جانوروں کو ذبح کرنے کے لئے حلال یا شیچیٹا طریقہ اپنایا جائے گا تو کنزیومرز یا پروسسیڈ میٹ انڈسٹری کو فروخت کئے جانے والے گوشت پر خصوصی لیبل کی ضرورت ہوگی جبکہ ایسے جانور جن کو شاٹ، گیسڈ یا جھٹکے سے کاٹ کر گوشت حاصل کیا گیا ہو پر ایسے لیبل نہیں ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ میں یورپی پارلیمنٹ میں اپنے ساتھیوں کو قائل کرنے کی کوشش کر رہا ہوں کہ یہ ریگولیشنز بظاہر ذبح کرنے کے اس طریقے کو سنگل آوٴٹ کرنے کے لئے ہیں۔ میں اس امتیازی تجویز کے خلاف جدوجہد جاری رکھوں گا۔ واضع رہے کہ ایک ڈینش ایم ای پی نے اسلامی اور جیوش طریقے سے ذبحہ کئے جانے والے جانوروں کے گوشت پر مخصوص لیبلنگ کی مہم شروع کر رکھی ہے۔