مقبول خبریں
برطانوی حکومت مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے اپنا اثر و رسوخ استعمال کرے:ایم پی جیوڈتھ کمنز
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
حکومت پاکستان مقبوضہ کشمیر میں مظالم بارے دنیا کے سامنے اپنا موثر کردار ادا کرے:کشمیری رہنما
برمنگھم:مقبوضہ کشمیر میں جس طرح وسیع پیمانے پر انسانی حقوق کی پامالیاں اور انسانیت ساز مظالم ہو رہے ہیں اس پر عالمی امن کے علمبرادورں کی خاموشی سے نہ صرف خطے کے امن بلکہ اس سے کسی خطرناک جنگ کے چھڑ جانے کا خدشہ پیدا ہو گیا ہے اس کی ذمہ داری اقوام متحدہ پرہوگی جس کے معرض وجود میں آنے کا مقصد یہ تھا کہ مظلوم اور محکوم قوموں کے ساتھ انصاف کیا جائے گا اور دنیا میں امن قائم ہوگا جبکہ کشمیری گزشتہ ستر سال سال سے اپنے حق خودارادیت کے حصول کے لیے جدوجہد کر رہئے ہیں اور مسلسل قربانیاں دے رہے ہیں ان خیالات اظہار برطانیہ میں قائم کشمیری جماعتوں کے مشترکہ پلیٹ فارم کل جماعتی کشمیر رابطہ کمیٹی کے صدر مفتی فضل احمد قادری کی زیر صدارت منعقدہ اجلاس سے مختلف کشمیر جماعتوں کے رہنمائوں نذیر احمد قریشی، پروفیسر نذیر شال، محمد غالب، راجہ محمد عارف، شیراز خان، چوہدری منظورحسین، چوہدری محمد عظیم، راجہ فہیم کیانی ، چوہدری ظفر اقبال ایڈوکیٹ ِ،صاحبزادہ فاروق القادری ِ حافظ نثار احمداور دیگر رہنمائوں نے مقبوضہ کشمیر کی موجودہ صورت حال پر کیا ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت پاکستان اس موقعہ پر اپنی سفارتی کوششوں کو تیز کرے دنیا کے سامنے بھارت کے مظالم اور ریاستی دہشت گردی کو پیش کرنے کے لیے اپنا موثر کردار ادا کرے کشمیری عوام پاکستان سے جو توقعات رکتھے ہیں انہیں مد نظر رکھا جائے اور خارجہ پالیسی پر توجہ دی جائے دنیا میں ایسے وفود بھیجے جائیں جو کشمیریوں کے موقف اور آواز دنیا تک پہنچا سکیں۔ رابطہ کمیٹی کے رہنمائوں نے حکومت پاکستان کی پارلیمانی کشمیر کمیٹی کی کوئی کار کردگی پر عدم اعتماد کا اظہار کیا اور کہا کہ اس وقت کل وقتی وزیر خارجہ کی ضرورت جو موجودہ صورت کو عالمی سطح پر پیش کرے کہ بھارت کے ظلم اور بربریت اور مسلسل کرفیو کے نتیجے میں حالات انتہائی سنگین ہو چکے ہیںبھارت پر دبائو ڈالہ جائے کہ وہ کشمیریوں پر جو ہتھیار استعمال کر رہا ہے اس سے سیکڑوں لوگ نابینا ہو چکے ہیں اس طرح کے ہتھیار اور ہسپتالوں پر حملے بند کیے جائیں ا نٹر نیشنل میڈیا، انسانی حقوق تنظیموںاور ریلیف اجنسیوں پر عائد پابندیوں کو ختم کیا جائے۔اجلاس میں کشمیر رابطہ کمیٹی کے بانی رہنما اور سابق سرپرست اعلیٰ مولانا بوستان قادری کی کشمیر کے لیے عظیم خدمات پر انہیں زبردست خراج تحسین پیش کیا گیا اور ان کے لیے دعائے مغفرت کی گی۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ برطانوی اور یورپین ممبران پارلمنٹ کو مقبوضہ کشمیر کی اس تشویش ناک صورت حال سے آگا کیا جائے گا ملک بھر میں بھر پور مہم شروع کی جائے گی مختلف ممالک کے سفیروں کو خطوط لکھے جائیں گے۔ اجلاس میں ورلڈ کشمیر فریڈم موومنٹ، کشمیر کنسرن برطانیہ، جمو ںو کشمیر سنی حریت کونسل برطانیہ، پیپلز پارٹی ، جماعت اسلامی، تحریک کشمیر برطانیہ، جمو ں وکشمیر لبریشن لیگ برطانیہ، کشمیر فورم برطانیہ، تحریک علمٰا جموں و کشمیر برطانیہ کے رہنمائوں نے شرکت کی۔